اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

شام کا حال اور مستقبل دونوں ’تاریک‘

اِس رپورٹ کے کچھ حصے آپ کے ليے تکليف دہ ہو سکتے ہيں۔

شام کے صدر بشار الاسد نے ايک روسي ٹيلي ويژن کو انٹرويو ميں مغرب پر زور ديا ہے کہ اگر اُنہيں يورپ ميں پناہ گزينوں کي آمد پر تشويش ہے تو اُنہيں شام ميں بقول صدر اسد، دہشت گردوں کي پُشت پناہي ختم کرنا ہوگي۔ اقوام متحدہ کے اندازوں کے مطابق اِس جنگ ميں اب تک دو لاکھ افراد ہلاک اور پچھہتر لاکھ تک بےگھر ہو چکے ہيں۔ بي بي سي کے ايڈيٹر برائے مشرق وسطٰي جيرمي بوون سرکاري فوجوں اور اپوزيشن کے دستوں کے درميان جنگ کے اگلے مورچے جوبار گئے۔ ديکھيے اُن کي رپورٹ، پيش کر رہے ہيں زياد ظفر۔