کشمیر
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’نہ تو کچھ ہوا اور نہ ہی کچھ ہو گا‘

آٹھ اکتوبر دو ہزار پانچ کو آنے والے زلزلے میں ایک پوری نسل متاثر ہوئی۔ جس وقت یہ زلزلہ آیا تو ملک بھر میں بچے سکولوں میں موجود تھے۔ ہلاک ہونے والوں میں ایک بہت بڑی تعداد انہی کلاس روموں میں بیٹھے بچوں کی تھی۔ بالاکوٹ شہر کے شاہین پبلک سکول کے بھی سینکڑوں بچے اس دوران ہلاک ہو گئے۔ ہمارے نامہ نگار شاہزیب جیلانی ان چند صحافیوں میں سے ایک تھے جو سب سے پہلے بالاکوٹ پہنچے۔ دس سال بعد اب شاہزیب جیلانی نے دوبارہ اس علاقے کا دورہ کیا اور کچھ متاثرین سے بات کی۔