اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

’فوج نہیں بلکہ تعلیم دہشت گردی ختم کر سکتی ہے‘

پشاور ميں آرمی پبلک سکول پر طالبان کے حملے کو ایک برس پورا ہونے کو ہے۔ اِس سانحے میں 142 افراد ہلاک ہوئے تھے جن میں 130 سے زيادہ بچے تھے۔ اِن میں سے ایک حارث نواز بھي تھے اور اُن کے بھائی احمد نواز اِس واقعے میں شديد زخمی ہوئے تھے۔ اُنہيں علاج کے لیے برطانيہ کے شہر برمنگھم منتقل کیا گیا اور وہ اِس وقت وہیں مقیم ہیں۔ ہمارے ساتھي عادل شاہ زیب نے برمنگھم میں احمد اور اُن کے خاندان سے ملاقات کي۔

یہ رپورٹ سانحہِ آرمی پبلک سکول پر بی بی سی اردو کی خصوصی کوریج کا حصہ ہے۔