پاکستان، انڈیا کشیدگی کا اثر بازارِ حصص پر

Image caption جمعرات کو پاکستان کے بازارِ حصص میں دن کا آغاز 502 پوائنٹس کے اضافے سے ہوا مگر جب لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کی خبر آئی تو دیکھتے ہی دیکھتے انڈیکس 502 پوائنٹس نیچے آ گئی

پاکستان اور انڈیا کے درمیان جاری کشیدگی کا براہِ راست اثر جمعرات کو پاکستان کے بازارِ حصص پر بھی پڑا اور لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کی خبریں آنے کے بعد دن کا اختتام مندی پر ہوا۔

جمعرات کو پاکستان کے بازارِ حصص میں دن کا آغاز 502 پوائنٹس کے اضافے سے ہوا مگر جب لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کی خبر آئی تو دیکھتے ہی دیکھتے انڈیکس 502 پوائنٹس نیچے آ گئی، چند ہی منٹ بعد انڈیکس مزید 150 پوائنٹس نیچے گر گئی۔

معروف سٹاک بروکر ظفر موتی نے بی بی سی کو بتایا 'بمبئی اور کراچی کے بازارِ حصص میں پریشانی پائی جاتی ہے اور کل کا دن اس لیے بھی بہت اہم ہے کیونکہ جمعے کو کاروبار دو سیشن مین ہوتا ہے۔ اگر پاکستان اور انڈیا تناؤ بڑھا تو پھر دونوں ممالک میں بازارِ حصص ایک ہزار پوائنٹس تک نیچے آسکتا ہے۔'

انھوں نے کہا کہ کاروباری طبقے کی دونوں ممالک سے اپیل ہے کہ وہ تناؤ نہ بڑھائیں اور سمجھداری کا مظاہرہ کریں۔

انھوں نے مذید کہا کہ کسی بھی ممکنہ جھڑپ کی صورت میں پاکستان کی سٹاک مارکیٹ سے بیرونی سرمایہ تو فوراً ہی نکل جائے گا مگر انڈیا میں پاکستان کی نسبت بہت بڑی غیر ملکی سرمایہ کاری موجود ہے جس کی وجہ سے پاکستان کا زیادہ نقصان ہوگا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں