’پاکستان اور انڈیا کی ورکنگ باؤنڈری پر فائرنگ، دو بچوں سمیت چار ہلاک‘

ایل او سی تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption دونوں جانب سے ایل او سی پر فائر بندی کی خلاف ورزیوں کے الزامات عائد کیے جا رہے ہیں

پاکستان اور انڈیا نے ایک دوسرے پر ورکنگ باؤنڈری پر بلااشتعال فائرنگ کے الزامات عائد کیے ہیں اور فائرنگ کے ان واقعات میں دو بچوں سمیت چار افراد کی ہلاکت اور متعدد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

پاکستانی فوج نے پیر کو ایک بیان میں کہا ہے کہ انڈیا کی جانب سے اتوار اور پیر کی درمیانی شب ورکنگ باؤنڈری پر ہرپل، پکھلیاں اور چارواہ سیکٹرز میں بلااشتعال فائرنگ کی گئی جس کے نتیجے میں جنگلورا گاؤں سے تعلق رکھنے والے محمد لطیف اور ڈیڑھ سالہ بچی ہنیا ہلاک ہوئے ہیں۔

٭ ورکنگ باؤنڈری کے قریب دیہات سے نقل مکانی

٭ انڈیا کا سات رینجرزہلاک کرنے کا دعویٰ، پاکستان کی تردید

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق فائرنگ سے سات شہری زخمی بھی ہوئے ہیں جنھیں سی ایم ایچ سیالکوٹ منتقل کر دیا گیا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق فائرنگ کا تبادلہ رات بھر جاری رہا اور ’پنجاب رینجرز نے ورکنگ باؤنڈری پر انڈیا کی جانب سے کی جانے والی بلا اشتعال فائرنگ کا بھرپور جواب دیا۔‘

دوسری جانب انڈین وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے اپنی ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ جموں کے علاقے میں پورا سیکٹر میں سرحد پار سے فائرنگ کے نتیجے میں انڈیا کا ایک سرحدی محافظ ہلاک ہوا ہے۔

انڈین ذرائع ابلاغ نے فوجی ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ مرنے والوں کی تعداد دو ہے اور ان میں ایک بچہ بھی شامل ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بیان میں کہا گیا ہے کہ فائرنگ کا تبادلہ رات بھر جاری رہا

خیال رہے کہ انڈیا کے زیرانتظام کشمیر کے علاقے اوڑی میں فوجی کیمپ پر حملے اور اس کے بعد انڈیا کے پاکستان کے زیرانتظام کشمیر میں سرجیکل سٹرائیکس کے دعوے کے بعد دونوں ممالک کے درمیان پہلے سے کشیدہ تعلقات مزید تلخ ہو گئے ہیں۔

ان واقعات کے بعد ایل او سی پر فائر بندی کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ مسلسل جاری ہے اور اب تک ایسے واقعات میں نصف درجن سے زیادہ افراد مارے جا چکے ہیں۔

گذشتہ ہفتے انڈیا کی سرحدی فورس بی ایس ایف نے جموں میں ورکنگ باؤنڈری پر فائرنگ کر کے پاکستانی رینجرز کے سات اہلکاروں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ بھی کیا تھا جسے پاکستانی حکام نے مسترد کر دیا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں