انڈین وزیر دفاع کے بیان کی کوئی اہمیت نہیں: دفترخارجہ

نفیس زکریا تصویر کے کاپی رائٹ AP

پاکستان دفتر خارجہ کا کہا ہے کہ انڈین وزیر دفاع منوہر پاریکر کے انڈیا کی جانب سے جوہری ہتھیاروں کے 'استعمال میں پہل نہ کر نے' کے بیان کی 'کوئی اہمیت نہیں ہے۔'

جمعے کو پریس انفارفیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس زکریا کا کہنا تھا کہ 'پاکستان کا یقین ہے کہ 'استعمال میں پہل نہ کرنے' کا مبہم بیان قابل تصدیق نہیں ہے اور اس کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔'

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ یہ ایک ایسے ملک کے وزیر دفاع کا بیان ہے جو مسلسل جارحیت کے ساتھ تناؤ میں اضافہ کر رہا ہے جس سے نا صرف خطے کے ممالک بلکہ عالمی امن اور سلامتی کو بھی خطرہ ہے۔

خیال رہے کہ یہ بیان ایسے وقت سامنے آیا ہے جب این ایس جی میں انڈیا کی شمولیت پر گفتگو کے لیے ایک غیرمعمولی پینل بلایا گیا ہے۔

نفیس زکریا کا کہنا تھا کہ پاکستان نے خود کو نیوکلیئر سپلائرز گروپ کی رکنیت کے لیے ایک سنجیدہ امیدوار کے طور پر پیش کیا ہے اور یہ پاکستان کی متحرک سفارتکاری کا نتیجہ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP

ان کا کہنا تھا کہ ایسے ممالک کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے جو کسی خاص ملک کی طرفداری سے اجتناب برتنے اور غیرامتیازی حکمت عملی پر عمل پیرا ہیں۔

حالیہ سرحدی کشیدگی کے حوالے سے نفیس زکریا کا کہنا تھا کہ پاکستان انڈیا کے ساتھ کشیدگی میں اضافہ نہیں چاہتا لیکن اگر سیزفائر کی خلاف ورزی کی گئی تو پاکستان اس کا بھرپور جواب دے گا۔

واضح رہے کہ حالیہ دنوں میں لائن آف کنٹرول پر انڈین فوج کی فائرنگ سے سات پاکستانی فوجی ہلاک ہوئے تھے جبکہ پاکستان کی جانب سے فوجیوں اور شہریوں کی ہلاکت پر احتجاج بھی ریکارڈ کروایا جا چکا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں