پنجاب کے میدانی علاقے دھند کی لپیٹ میں، ’بارش کا امکان نہیں‘

دھند تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ’بارشیں کم ہونے کی وجہ سے فضائی آلودگی زیادہ ہے اور بارانی علاقوں میں گندم کی کاشت متاثر ہوئی ہے‘

پاکستان کے محکمۂ موسمیات کا کہنا ہے کہ پنجاب کے بیشتر میدانی علاقے آئندہ دو دن تک دھند کی شدید لپیٹ میں رہیں گے جبکہ میدانی علاقوں میں آئندہ دو ہفتوں تک بارشوں کا امکان نہیں ہے۔

ڈائریکٹر محمد حنیف نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ’پچھلے کئی ہفتوں سے پاکستان کے میدانی علاقوں میں موسم خشک ہے اور یہ غیرمعمولی صورتحال ہے اور ملک میں پر پانچ سے چھ سال بعد اس وقت اس قسم کا موسم بنتا ہے جب موسم سرما کی بارشیں تاخیر کا شکار ہوتی ہیں یا کم ہوتی ہیں۔‘

محمد حنیف کا کہنا ہے کہ بارشیں کم ہونے کی وجہ سے فضائی آلودگی زیادہ ہے اور بارانی علاقوں میں گندم کی کاشت کافی حد تک متاثر ہوئی ہے۔

’بارشیں نہ ہونے کی وجہ سے ہی پچھلے پانچ دنوں سے ملک کے میدانی علاقوں میں خصوصاً پنجاب میں شدید دھند ہے اور گذشتہ دو دنوں میں ناصرف دھند کی شدت میں اضافہ ہوا بلکہ اس کے پھیلاؤ میں بھی اضافہ ہوا ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’اب یہ پنجاب کے میدانی علاقوں کے علاوہ سندھ کے بالائی میدانی علاقے سکھر، گھوٹکی اور خیبرپختونخوا کے جنوبی علاقوں ڈیرہ اسماعیل خان اور بنوں تک پھیل چکی ہے۔‘

محمد حنیف کے مطابق دھند کی سب سے زیادہ شدت بالائی پنجاب اور لاہور، فیصل آباد، ساہیوال، ملتان کے علاقوں سمیت موٹروے اور جی ٹی روڈ کے بیشتر حصوں میں ہے۔

’صبح اور رات کے وقت دھند کی شدت سب سے زیادہ ہوتی ہے اور آج کل اس کا دورانیہ دس سے 12 گھنٹے ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption آئندہ چند دنوں میں پاکستان کے بیشتر علاقوں میں بارش کا امکان نہیں

ان کا کہنا تھا کہ آئندہ چند دنوں میں پاکستان کے بیشتر علاقوں میں بارش کا امکان نہیں لہذا آئندہ دو دنوں میں اس کی شدت میں مزید اضافہ ہوگا اور رواں ہفتے کے آخر تک پنجاب کے میدانی علاقوں میں اس کا دورانیہ 14 سے 16 گھنٹے تک ہوسکتا ہے۔

محمد حنیف کے مطابق ملک کے شمالی علاقوں، خیبرپختونخوا اور کشمیر میں رواں موسم کی اچھی برفباری ہوئی ہے اور آئندہ چند دنوں میں مزید بارش اور برفباری کا امکان ہے تاہم ملک کے بیشتر میدانی علاقوں میں کم از کم آئندہ دو ہفتوں تک شدید بارش کے آثار دکھائی نہیں دے رہے۔

دوسری جانب نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس کا کہنا ہے کہ شدید دھند کے باعث رات ساڑھے سات بجے سے صبح ساڑھے آٹھ بجے کے درمیان موٹروے کی مختلف حصوں کو ٹریفک کے لیے بند کر دیا جاتا ہے۔

موٹروے پولیس کے مطابق دن کے وقت موٹروے پر ٹریفک معمول کے مطابق رہتی ہے جبکہ انھیں موٹروے پر دھند کے باعث کسی قسم کے حادثے کی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں