ایل او سی: مارٹر گولے سے شہری ہلاک، آٹھ بچے زحمی

انڈیا تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پاکستانی فوج کا کہنا ہے کہ پاکستان کے زیرِانتظام کشمیر کے ضلع کوٹلی میں انڈین فوج کی فائرنگ سے ایک شہری ہلاک جبکہ آٹھ بچے زخمی ہوئے ہیں۔

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی جانب سے جمعے کو جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ ضلع کوٹلی کے نکیال سیکٹر میں انڈین فوج کی جانب سے فائرنگ اور مارٹر گولوں کے نشانے سے ایک شہری ہلاک جبکہ سکول جانے والے آٹھ بچے زخمی ہوئے ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ انڈین فوجیوں نے ایک سکول وین کو نشانہ بنایا جس پر سوار بچے زخمی ہوئے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ انڈین فوج کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ پر پاکستانی فوج نے جوابی فائرنگ کی اور انڈین فوج کی پوسٹ کو نشانہ بنایا ہے۔

پاکستان کے دفتر خارجہ نے جمعے کو انڈین ہائی کمیشن کے ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو دفترِ خارجہ طلب کیا اور ’لائن آف کنٹرول پر بلا اشتعال فائرنگ کی مذمت کی۔‘

مظفر آباد سے صحافی اورنگزیب جرال نے بتایا ہے کہ نکیال کے اسسٹنٹ کمشنر ذیشان نثار کے مطابق تحصیل نکیال سے دس کلومیٹر کے فاصلے پر موہڑہ بازار میں انڈین فوج کی جانب سے جمعے کی صبح مارٹر کا گولہ فائر کیا گیا جو بچوں کو سکول لے جانے والی وین کے قریب گرا جس کے نتیجے میں گاڑی کا ڈرائیور ہلاک ہو گیا۔

انھوں نے بتایا کہ امدادی کارروائیاں جاری ہیں اور آٹھ زخمی بچوں کو ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ انڈیا کے زیرِ Iانتظام کشمیر میں اوڑی کیمپ پر شدت پسندوں کے حملے کے بعد سے دونوں ملکوں کے درمیان لائن آف کنٹرول پر کشیدگی میں بےحد اضافہ ہو گیا ہے اور اس دوران متعدد افراد مارے جا چکے ہیں۔

دونوں ملک ایک دوسرے پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کے الزامات لگاتے رہتے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں