وکی میڈیا کا فوٹوگرافی مقابلہ

اسلام آباد تصویر کے کاپی رائٹ Muhammad Ashar
Image caption اسلام آباد میں واقع پاکستان مونومنٹ کی شام کے وقت بنائی گئی محمد اشعر کی تصویر کو چھٹی بہترین تصویر قرار دیا گیا ہے

وکی میڈیا کی جانب سے فوٹوگرافی کے کروائے گئے ایک مقابلے میں تین پاکستانی فوٹوگرافروں کی تصاویر دس بہترین تصاویر میں شامل کی گئی ہیں۔

وکی میڈیا کے مطابق 'وکی لوز مونومنٹس 2016' کے عنوان سے منعقد کرائے گئے اس مقابلے میں دنیا بھر سے 10،748 فوٹوگرافروں نے تقریبا تین لاکھ تصاویر بھیجیں جن میں سے 15 بہترین تصاویر منتخب کی گئی ہیں۔

فوٹوگرافی کے اس مقابلے کو دنیا کا سب سے بڑا فوٹوگرافی کا مقابلہ بھی کہا جاتا ہے۔

اس مقابلے میں جرمنی کے دارالحکومت برلن کی ڈسٹرکٹ کورٹ کی انسگر کورنگ کی بنائی ہوئی تصویر کو پہلے انعام کا حقدار ٹھہرایا گیا۔

اسلام آباد میں واقع پاکستان مونومنٹ کی شام کے وقت بنائی گئی محمد اشعر کی تصویر کو چھٹی بہترین تصویر قرار دیا گیا۔

دس بہترین تصاویر میں پاکستان کی دوسری تصویر ضلع بہاولپور میں اوچ کے مقام پر واقع بی بی جیوندی کے مقبرے کی تصویر ہے۔ اسامہ شاہد کی بنائی ہوئی یہ تصویر مقابلے کی آٹھویں بہترین تصویر ہے۔

صوبہ پنجاب کے ضلع بہاولپور میں‌ نویں صدی میں تعمیر کردہ قلعہ دراوڑ کی تحسین شاہ کی بنائی ہوئی تصویر مقابلے کی دسویں بہترین تصویر ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Ansgar Koreng
Image caption جرمنی کے دارالحکومت برلن کی ڈسٹرکٹ کورٹ کی انسگر کورنگ کی بنائی ہوئی تصویر کو پہلے انعام کا حقدار ٹھہرایا گیا

وکی میڈیا کے مطابق یہ منتخب تصاویر 42 ممالک کی بہترین ثقافتی ورثے کی عکاس ہیں۔

اس مقابلے کا آغاز سنہ 2010 میں ہوا تھا جس میں وکی میڈیا کامنس کے ذریعے تصاویر بھیجی گئی تھیں۔

وکی میڈیا کا کہنا ہے یہ تصاویر ان ممالک کی قومی یادگاروں سے متعلق مضامین کے ساتھ تصویری جھلک پیش کرنے میں مدد کر سکتی ہیں اور بلا کسی لائسنس کے دستیاب ہیں۔

وکی میڈیا کے مطابق اس تصویری مقابلے کا ایک مقصد یہ بھی ہے کہ تصاویر بنانے والوں کو کریئٹو کامنز لائسنس کے تحت تصاویر مہیا کرنے کےلیے رضامند کیا جائے جس کے تحت کوئی بھی دنیا میں انھیں تصویر بنانے والے کا نام دے کر استعمال کر سکتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Colin
Image caption مقابلے کی دوسری بہترین تصویر۔ کولن کی بنائی برطانیہ کے رائل البرٹ ہال کا اندرونی منظر کی تصویر
تصویر کے کاپی رائٹ Richard J Smith
Image caption تیسرے نمبر پر رچرڈ جے سمتھ کی برطانیہ میں پیرچ راک لائیٹ ہاؤس کی بنائی ہوئی تصویر رہی
تصویر کے کاپی رائٹ Lara Zanarini
Image caption چوتھی بہترین تصویر لارا زنرینی کی اٹلی میں ایمیلیا رامگنا کی چوٹیوں کی بنائی ہوئی تصویر رہی۔
تصویر کے کاپی رائٹ Janepop Atirattanachai
Image caption پانچویں بہترین تصویر جینپوپ اترتناچئی کی تھائی لینڈ کے معروف واٹ ارن بودھ خانقاہ کی تصویر قرار دی گئی۔
تصویر کے کاپی رائٹ Gastão Guede
Image caption ساتویں نمبر پر برازیل کے صدارتی محل اور اس کے گردنواح کے منظر کی عکاسی کرتی ہوئی گستاؤ گوڈیس کی تصویر رہی۔
تصویر کے کاپی رائٹ Usamashahid433
Image caption آٹھویں بہترین تصویر ضلع بہاولپور میں اوچ کے مقام پر واقع بی بی جیوندی کا سنہ 1493 میں مقبرے کی تصویر ہے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Volodka22
Image caption جبکہ نویں بہترین تصویر سلوواکیا میں زلیچوف میں 14 صدی میں تعمیر کردہ سینٹ لارنس چرچ کو قرار دیا گیا جس کی ولوڈکا نے سرد موسم میں خوبصورت انداز میں عکس بندی کی۔
تصویر کے کاپی رائٹ Tahsin Shah
Image caption صوبہ پنجاب کے ضلع بہاولپور میں‌ نویں صدی میں تعمیر کردہ قلعہ دراوڑ کی تحسین شاہ کی بنائی ہوئی تصویر مقابلے کی دسویں بہترین تصویر ہے۔

متعلقہ عنوانات