کوئٹہ میں دھماکہ، فرنٹیئر کور کے چھ اہلکار زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ ہونے والے ایک بم دھماکے میں فرنٹیئر کور کے چھ اہلکار زخمی ہو گئے ہیں۔

پیر کو یہ واقعہ شہر کے مغربی بائی پاس کے علاقے بروری میں پیش آیا۔

جائے وقوعہ پر میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ڈی آئی جی پولیس کوئٹہ عبد الرزاق چیمہ نے بتایا کہ جس علاقے میں دھماکہ ہوا وہ سیکورٹی فورسز کی عارضی فائرنگ رینج ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ اس علاقے میں نامعلوم مسلح افراد نے دھماکہ خیز مواد نصب کیا تھا۔

ڈی آئی جی پولیس نے بتایا کہ جب ایف سی اہلکار وہاں فائرنگ کی ٹریننگ کے لیے پہنچے تو ایک زوردار دھماکہ ہوا۔

انھوں نے بتایا کہ دھماکے میں چھ اہلکار زخمی ہوئے جن کو ابتدائی طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کیا گیا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ یہ ریموٹ کنٹرول دھماکہ تھا جس کے لیے 8سے10کلو دھماکہ خیز مواد استعمال کیا گیا تھا۔

ڈی آئی جی نے بتایا کہ چونکہ یہ فائرنگ رینج ہے۔ یہاں عام طور سیکورٹی نہیں ہوتی ہے اس لیے اس جگہ کا انتخاب کیا گیا۔

بلوچستان میں حالات کی خرابی کے بعد سے کوئٹہ شہر میں بم دھماکوں کا سلسلہ جاری ہے تاہم سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ پہلے کے مقابلے میں اب حالات میں بہتری آئی ہے۔

اسی بارے میں