پشین سے ایک افغان شہری کی تشدد زدہ لاش برآمد

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بلوچستان میں 2007 سے تشدد زدہ لاشوں کی برآمدگی کا سلسلہ شروع ہوا تھا

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع پشین کے سے ایک افغان شہری کی تشدد زدہ لاش برآمد کی گئی۔

پشین میں پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ یہ لاش شہر کے علاقے کلہ تراٹہ سے برآمد کی گئی۔

* بلوچستان: لاپتہ افراد یا قبائلی تنازعات؟

* کیچ سے تین لاشیں برآمد، آواران میں پانچ اہلکار زخمی

نامہ نگار محمد کاظم کے مطابق پولیس اہلکار کا کہنا تھا کہ ہلاک کیا جانے والا شخص افغانستان کا شہری تھا جنہیں نامعلوم افراد نے سینے میں ایک گولی ماری تھی۔ جس کے بعد لاش ویرانے میں پھینک دی گئی تھی ۔ تاحال ان کو ہلاک کرنے کے محرکات معلوم نہیں ہوسکے۔

پشین بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ سے شمال میں 50کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔

کوئٹہ، پشین اور بلوچستان کے پشتون آبادی والے دیگر علاقوں سے پہلے بھی افغان شہریوں کی تشددزدہ لاشیں برآمد ہوتی رہی ہیں۔

48 گھنٹوں کے دوران بلوچستان کے کسی علاقے سے برآمد ہونے والی یہ دوسری لاش تھی۔

اس سے قبل ایران سے متصل ضلع کیچ کے علاقے تمپ سے بھی ایک شخص کی تشدد زدہ لاش ملی تھی۔

کیچ میں انتظامیہ کے ذرائع کے مطابق تمپ سے جس شخص کی لاش برآمد ہوئی تھی اس کی شناخت ہوگئی ہے۔ اس شخص کا تعلق گوادر کے علاقے جیونی سے تھا جسے تین ماہ قبل اغوا کیا گیا تھا۔

بلوچستان میں حالات کی خرابی کے بعد سے 2007 سے تشدد زدہ لاشوں کی برآمدگی کا سلسلہ شروع ہوا تھا۔

کمی و بیشی کے ساتھ لاشوں کی برآمدگی کا سلسلہ اب بھی جاری ہے لیکن سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ پہلے کے مقابلے میں ان میں کمی آئی ہے۔

اسی بارے میں