پنجاب انتظامیہ پی ایس ایل فائنل کیلئے تیار، حتمی فیصلہ وزیر اعظم کا ہوگا

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption پی سی بی نے پی ایس ایل کے آغاز میں اس عزپ کا اعادہ کیا تھا کہ ٹورنامنٹ کا فائنل لاہور میں ہی ہوگا

وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی قیادت میں صوبائی ایپکس کمیٹی کا اجلاس لاہور میں منعقد ہوا جس میں لاہور میں ہونے والے پی ایس ایل فائنل کے انعقاد کا حتمی فیصلہ وزیر اعظم میاں نواز شریف پر چھوڑ دیا گیا ہے۔

اجلاس میں سکیورٹی کے حوالے سے متعلقہ اداروں نے بھی اپنی رپورٹس پیش کیں اور اس بات کا یقین دلایا کہ پنجاب میں انتظامیہ پی ایس ایل فائنل لاہور میں کروانے کیلئے مکمل طور پر تیار ہے، مزید یہ کہ قذافی سٹیڈیم میں میچ دیکھنے کیلئے آنے والے افراد کے تحفظ کو بھی یقینی بنایا جائے گا۔ تاہم لاہور میں پی ایس ایل کے فائنل کے انعقاد کے حوالے سے حتمی فیصلہ وزیر اعظم ہی کریں گےـ

’پاکستان سپر لیگ کا فائنل لاہور میں ہی ہو گا‘

لاہور ایک بار پھر نشانہ

بی بی سی اردو کی حنا سعید سے بات کرتے ہوئے پنجاب حکومت کے ترجمان مالک محمد احمد نے بتایا کہ پی ایس ایل فائنل لاہور میں کروانے کا فیصلہ ایپکس کمیٹی کے ہاتھ میں نہیں، یہ پی سی بی کا معاملہ ہے اور پیٹرن ان چیف ہونے کی تحت اس حوالے سے حتمی فیصلہ وزیراعظم پاکستان ہی لے سکتے ہیں ـ

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’صوبائی ایپکس کمیٹی کا کام صوبے کی سکیورٹی معاملات کا جائزہ لے کر اس حوالے سے اہم فیصلے کرنا ہے تاہم آج کے اجلاس میں پی ایس ایل کے حوالے سے تفصیلی رپورٹ پیش کی گئی جس میں قذافی سٹیڈیم، اس کی کار پارکنگ اور گردونواح میں سکیورٹی انتظامات کے حوالے سے سفارشات مرتب کی گئیں ہیں ـ

تصویر کے کاپی رائٹ Government of Punjab
Image caption وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی قیادت میں صوبائی ایپکس کمیٹی کا اجلاس جس میں سیکورٹی امور پر تبادلہ خیال ہوا

اس کی علاوہ پی ایس ایل فائنل کے روز لاہور شہر اور اِس کے داخلی اور خارجی راستوں پر معمور سکیورٹی کا بھی جائزہ لیا گیاـ اجلاس کے اختتام پر مرتب کی گئی سفارشات پر وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف، وزیر اعظم پاکستان سے گفتگو کریں گے جس کی بعد پی ایس ایل فائنل کے لاہور میں ہونے یا نہ ہونے کا حتمی فیصلہ ہو گاـ

دوسری طرف اجلاس میں آپریشن ردالفساد کو بھرپور انداز میں جاری رکھنےاور دہشت گردوں کے خلاف کارروائیاں مزید تیز کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ـ موجودہ اجلاس میں پنجاب کا دیگر صوبوں کے ساتھ قریبی تعاون کو یقینی بنانے کیلئے مل کرکام کرنے کی ضرورت پر بھی زوردیا گیاـ

وزیر اعلیٰ پنجاب نے صوبے بھر میں مساجد، امام بارگاہوں اور دیگر عبادت گاہوں کو فول پروف سکیورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی اور رینجرز، سی ٹی ڈی اور پولیس کے مشترکہ آپریشنز کا دائرہ کار مزید وسیع کرنے فیصلہ کیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption لاہور شہر میں حالیہ دہشت گردی کے واقعات کے بعد سیکورٹی مزید سخت کر دی گئی ہے

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا کہ: 'پنجاب میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن بلاامتیاز جاری رہے گا اور دہشت گردوں کی پشت پناہی کرنے والوں کے مذموم عزائم کو کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔’ان کا مزید کہنا تھا کہ دشمن جو ناپاک سازش کر رہا ہے، اسے اجتماعی کاوشوں سے ناکام بنائیں گے۔

اتوار کو لاہور میں ہونے والے ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں وزیر اعلیٰ پنجاب سمیت کور کمانڈر لاہور لیفٹیننٹ جنرل صادق علی، نیشنل سکیورٹی ایڈوائزر ناصر خان جنجوعہ، صوبائی وزیر انسداد دہشت گردی کرنل (ر) محمد ایوب ، ڈی جی رینجرز میجر جنرل اظہر نوید، جنرل آفیسر کمانڈنگ 10 ڈویژن میجر جنرل سردار طارق امان ، چیف سیکیرٹری پنجاب کیپٹن زاہد سعید، آئی جی پنجاب پولیس مشتاق سکھیرا، ہوم سیکرٹری پنجاب اعظم سلمان اور اعلیٰ سول و عسکری حکام نے شرکت کی ـ

اسی بارے میں