نواز شریف کی آپریشن ردالفساد کو مزید تیز کرنے کی ہدایت

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption وزیر اعظم نے آپریشن ردالفساد کی رفتار کو مزید تیز کرنے کی ہدایت کی۔

پاکستان کے وزیر اعظم نواز شریف نے ملک میں شدت پسندوں کے خلاف جاری آپریشن کے خلاف ردالفساد نامی آپریشن کو مزید تیز کرنے کی ہدایت کی ہے۔

پیر کے وزیر اعظم نواز شریف کی سربراہی میں ہونے والی اعلیٰ سطحی اجلاس میں آپریشن ردالفساد کا جائزہ لیا گیا۔

وزیر اعظم ہاؤس کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شدت پسندوں کے خلاف جاری آپریشن کا جائزہ لینے کے لیے بلائے جانے والے اجلاس کے تمام شرکا نے متفقہ طور اس عزم کا اعادہ کیا کہ شدت پسندی اور دہشتگردی کا خاتمہ ملک کی سلامتی کے لیے انتہائی اہم ہے۔

وزیر اعظم نے پاکستانی فوج اور دوسرے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شدت پسندی اور دہشتگردی کے خاتمے کے لیے جاری آپریشن ردالفساد کی رفتار کو مزید تیز کرنے کی ہدایت کی۔

وزیر اعظم کی سربراہی میں ہونے والے اجلاس میں آرمی چیف قمر جاوید باجوہ، وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف، آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹینٹ جنرل نوید مختار، قومی سلامتی کے مشیر ناصر خان جنجوعہ، وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور خارجہ امور پر وزیر اعظم کے مشیر سرتاج نے شرکت کی۔

حکومتی بیان کے مطابق وزیر اعظم نے کہا ہے کہ ملک سے 'شدت پسندی اور دہشتگردی' کا خاتمہ حکومت کی پالیسی کا اہم جز ہیں۔

اجلاس میں انسداد دہشتگردی سے متعلق قوانین پر غور کیا گیا اور انھیں مزید موثر بنانے کےلیے طریقہ کار پر بھی بات کی گئی۔

اجلاس کے بعد جاری ہونے و الے اعلامیہ میں کہا گیا کہ امن کے دشمنوں کو ملک کے امن و امان کو خراب کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کے لیے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو اپنی کوششیں تیز کرنی چاہیئں۔

اسی بارے میں