’پاکستان افغانستان کے بارے میں ہونے والے مذاکرات میں شرکت کرے گا‘

فارن آفس

پاکستانی دفتر خارجہ نے اپریل میں روس میں افغانستان میں قیام امن کے سلسلے میں ہونے والی بات چیت کا خیرمقدم کرتے کہا ہے کہ پاکستان ان مذاکرات میں شرکت کرے گا۔

ہفتہ وار پریس بریفنگ میں پوچھے گئے سوالات کے جواب میں ترجمان نفیس زکریا نے کہا کہ اس بات کا فیصلہ بہت جلد کر لیا جائے گا کہ ان کثیر ملکی مذاکرات میں پاکستان کی نمائندگی کس سطح پر کی جائے گی۔

٭ برطانوی میزبانی میں پاک افغان مذاکرات بدھ کو

٭ پاکستان افغانستان مذاکرات کی فلاپ فلم

تاہم انھوں نے ان مذاکرات میں طالبان کی شرکت اور اس سلسلے میں پاکستانی کردار کے بارے میں تبصرہ کرنے سے انکار کرتے کہا کہ طالبان کو ان مذاکرات میں شرکت کی دعوت دی گئی ہے یا نہیں، یہ بات تو میزبان ملک ہی بتا سکتا ہے۔

نفیس زکریا نے طالبان کو ان مذاکرات میں شرکت پر راضی کرنے کے سلسلے میں طالبان وفد کے پاکستان کے حالیہ دورے کے بارے میں شائع ہونے والی خبروں کی تصدیق یا تردید سے انکار کیا۔

ان خبروں میں کہا گیا تھا کہ پاکستان نے ان مذاکرات میں شریک ہونے پر راضی کرنے کے لیے طالبان کے ایک وفد سے بات چیت کی ہے جس نے حال ہی میں پاکستان کا دورہ کیا تھا۔

نفیس زکریا نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں قیام امن کا پرجوش حامی ہے اور اس سلسلے میں ہر کوشش میں شامل ہو گا۔

بھارتی ریاست اتر پردیش میں سخت گیر ہندو نظریات کے حامل رہنما یوگی آدتیہ ناتھ کے وزیراعلیٰ منتخب ہونے کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ وہ انڈیا کے اندرونی معاملات پر تبصرہ نہیں کرنا چاہتے لیکن اس علاقے میں خاص طور پر مسلمانوں کے ساتھ ناروا سلوک کی اطلاعات تشویش ناک ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت میں صرف مسلمان ہی نہیں بلکہ دلت اور دیگر مذہبی عقائد رکھنے والوں کے حقوق کی خلاف ورزی معمول بن رہی ہے جسے روکنا ضروری ہے۔

اسی بارے میں