بلوچستان میں فائرنگ سے چار مزدور ہلاک

لاش تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے ضلع خاران میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے چار مزدور ہلاک ہو گئے۔

یہ واقعہ خاران سے دس کلو میٹر دور شالتاک کے قریب پیش آیا۔

بلوچستان: فائرنگ کے واقعات میں چار افراد ہلاک

خاران پولیس کے ایک سینئیر اہلکار نے بتایا کہ چار مزدور نیشنل ہائی وے کے ایک منصوبے پر کام کر رہے تھے کہ ایک موٹر سائیکل پر سوار مسلح افراد آئے اور انھوں نے مزدوروں پر فائرنگ کر دی جس کے نیتجے میں وہ چاروں ہلاک ہو گئے۔

انھوں نے بتایا کہ چاروں مزدوروں کا تعلق سندھ کے علا قے گھوٹکی سے تھا۔

نامہ نگار محمد کاظم کے مطابق پولیس اہلکار کا مزید کہنا تھا کہ ہلاک ہونے والے افراد کے ساتھ ایک چھوٹا بچہ بھی تھا لیکن وہ اس حملے میں محفوظ رہا کیونکہ جب یہ حملہ ہوا تو وہ کچھ فاصلے پر ایک ٹیوب ویل سے پانی لینے گیا تھا۔

اس واقعے کی ذمہ داری کالعدم عسکریت پسند تنظیم بلوچستان لبریشن فرنٹ نے قبول کی ہے۔

تنظیم کے ترجمان نامعلوم مقام سے فون پر بتایا کہ یہ حملہ ایک عسکری تعمیراتی کمپنی کے کارکنوں پر کیا گیا لیکن سرکاری سطح پر یا دیگر ذرائع سے ان مزدوروں کی کسی عسکری تعمیراتی کمپنی سے تعلق کی تصدیق نہیں ہوئی ہے۔