باہمی مفادات پر مبنی مضبوط تعلقات کے خواہاں ہیں: نواز شریف

امریکی اور پاکستانی حکام کی ملاقات تصویر کے کاپی رائٹ PID
Image caption امریکی صدر کے مشیر برائے قومی سلامتی کی پاکستانی وزیراعظم سے ملاقات نئی امریکی انتظامیہ کے تحت پاکستان اور امریکہ کے درمیان باقاعدہ اعلیٰ سطح کا پہلا رابطہ ہے

پاکستانی وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان اس خطے میں امن اور سلامتی کے لیے باہمی مفادات پر مبنی مضبوط تعلقات کا خواہاں ہے۔

وزیر اعظم ہاؤس سے پیر کو جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق نواز شریف نے یہ بات قومی سلامتی کے لیے امریکی صدر کے مشیر جنرل ایچ آر میک ماسٹر سے ملاقات میں کہی۔

لیفٹنٹ جنرل میک ماسٹر ٹرمپ انتظامیہ کی افغانستان پر بظاہر پالیسی کے ازسرنو جائزہ کے لیے آج کل اس خطے کے دورے پر ہیں۔

کابل میں افغان حکام کے ساتھ مذاکرات کے بعد پیر کو وہ اسلام آباد پہنچے جہاں انھوں نے وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کی۔

بیان کے مطابق وزیر اعظم نے ملاقات کے دوران ہمسایہ ممالک کے ساتھ پرامن روابط کے عزم کو دوہراتے ہوئے انڈیا اور افغانستان دونوں سے تعلقات کی بہتری کے لیے کوششوں سے امریکی جنرل کو آگاہ کیا۔

نواز شریف نے انڈیا اور پاکستان کے درمیان خصوصاً کشمیر کے مسئلے پر اختلافات کے خاتمے کے لیے امریکی پیشکش کا خیرمقدم بھی کیا۔

خیال رہے کہ اسلام آباد آمد سے قبل افغانستان کے ایک ٹی وی طلو کو دیے گئے ایک انٹرویو میں جنرل میک ماسٹر کا کہنا تھا کہ وہ امید کرتے ہیں کہ پاکستان اس بات کا احساس کرے گا کہ ماضی کے برعکس شدت پسندوں کے خلاف کارروائی میں اس کی بہتری ہے۔

خیال رہے کہ امریکی صدر کے مشیر برائے قومی سلامتی کی پاکستانی وزیراعظم سے ملاقات نئی امریکی انتظامیہ کے تحت پاکستان اور امریکہ کے درمیان باقاعدہ اعلیٰ سطح کا پہلا رابطہ ہے۔

متعلقہ عنوانات