70 برس پہلے:  تقسیم ہند کی بحث
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

انڈیا آزاد ہو گیا، پاکستان بن گیا، رہنما کیا چاہتے تھے: سنیے ایک بحث

تین جون 1947 کو برطانوی حکومت نے انڈیا میں منتقلی اقتدار کے منصوبے کا اعلان کیا۔ ان اعلان کے تقریباً تین مہینوں کے اندر پاکستان بن گیا۔ انڈیا آزاد ہو گیا۔ کیا اس وقت پاکستان کے بانی محمد علی جناح اور کانگریس پارٹی کے رہنما پنڈت جواہر لعل نہرو یہی چاہتے تھے؟

برطانوی حکومت کے اعلان کے مختلف پہلوؤں پر بی بی سی اردو نے ایک فیس بک لائیو کیا جس کی میزبان تھیں عالیہ نازکی۔ بحث کے شرکا تھے ڈاکٹر علی عثمان قاسمی۔ جو لاہور کی لمس یونیورسیٹی میں تاریخ کے استاد اور فیلو اِن ہسٹری ایٹ رائیل ہالووے کالج، یونیورسٹی آف لنڈن ہیں۔ آج کل نجی دورے پر جرمنی گئے ہوئے ہیں اور وہیں سے ٹیلی فون لائن پر براہِ راست گفتگو میں شریک ہوئے۔

انڈیا سے ڈاکٹر علی خان محمودآباد ہمارے ساتھ تھے۔ جو انڈیا کی اشوکا یونیورسٹی میں سیاسیات اور تاریخ کے اسِسٹنٹ پروفیسر ہیں۔ انھوں نے برطانیہ کی کیمرج یونیورسٹی سے ڈاکٹریٹ کی سند حاصل کی ہے۔ ان کے دادا راجہ صاحب محمودآباد، متحدہ ہندوستان کی ریاست محمودآباد کے والی اور مسلم لیگ کے صدر محمد علی جناح کے قریبی ساتھی تھے۔ اور لندن میں بی بی سی کے سٹوڈیو میں ہمارے ساتھ تھے۔ بیرسٹر نسیم باجوہ جو تین جون کے تقسیم ہند کے منصوبے سے متعلق کتاب کے مصنف ہیں۔