کوئٹہ میں آئی جی پولیس کے دفتر کے قریب خودکش دھماکے میں 13 افراد ہلاک

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں
پولیس اہلکاروں نے اپنی ہمت سے اس دھماکہ کرنے والے کو آئی جی کے دفتر تک جانے سے روکا۔

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں انسپکٹر جنرل پولیس کے دفتر کے قریب خودکش دھماکے میں 13 افراد ہلاک جبکہ 20 سے زیادہ زخمی ہوگئے ہیں۔

اس دھماکے میں ہلاک ہونے والوں میں سات پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔

حکومت بلوچستان کے ترجمان انوارالحق کاکڑ نے بی بی سی کے محمد کاظم کو بتایا کہ دھماکہ جمعے کی صبح گلستان روڈ پر واقع دفتر کے سامنے شہدا چوک پر ایک گاڑی ہوا۔

انھوں نے دھماکے میں 13 ہلاکتوں کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ زخمیوں کی تعداد 21 ہے۔

ڈی آئی جی پولیس کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ کے مطابق حملہ آور کی گاڑی کو پولیس اہلکاروں نے روکنے کی کوشش کی جس پر خودکش حملہ آور نے دھماکہ کر دیا۔

دھماکے کے نتیجے میں آئی جی افس کے علاوہ قریبی دکانوں اور مکانات کے شیشے بھی ٹوٹ گئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption آئی جی پولیس کا دفتر سکیورٹی کے حوالے سے کوئٹہ کے نسبتاً محفوظ علاقے میں واقع ہے

دھماکے سے ایک کار سب سے زیادہ متاثر ہوئی جبکہ ایک رکشے اور پولیس کی ایک گاڑی کے علاوہ چند موٹر سائیکلوں کو بھی نقصان پہنچا۔

جس جگہ یہ دھماکہ ہوا ہے وہ حساس علاقہ ہے اور دھماکے بعد سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔

شہری دفاع کے ڈائریکٹر جنرل اسلم ترین کے مطابق خودکش دھماکے میں 75 سے 80 کلو تک بارودی مواد استعمال کیا گیا تھا۔

اس واقعے کے بعد زخمیوں کو علاج کے لیے سول ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں زیرِ علاج ایک اہلکار شہاب عباس نے بی بی سی کو بتایا کہ ان کی ڈیوٹی آئی جی آفس میں ہے اور وہ معمول کے مطابق نفری کو دیکھنے کے لیے باہر نکلے تو چوک پر دھماکہ ہوا۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption دھماکے سے پولیس کی ایک گاڑی کے علاوہ چند موٹر سائیکلوں کو بھی نقصان پہنچا

ان کا کہنا تھا کہ 'ہمارے جوانوں نے ایک گاڑی کو روکنے کی کوشش کی جس پر اس میں دھماکہ ہوگیا۔'

ڈی آئی جی پولیس عبدالرزاق چیمہ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس وقت حملہ آور کے ہدف کے بارے میں کچھ کہنا مشکل ہے۔

خیال رہے کہ آئی جی پولیس چوک سکیورٹی کے حوالے سے کوئٹہ کے نسبتاً محفوظ علاقے میں واقع ہے۔

تاہم اس چوک پر نہ صرف پہلے دھماکے ہوتے رہے ہیں بلکہ ماضی میں اس کے چوک کے ساتھ آئی جی آفس کے رہائشی علاقے اور اس سے متصل پولیس لائن میں بھی خود کش حملے ہو چکے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں