ٹینکر حادثہ: ہلاکتوں کی تعداد 200 سے تجاوز کر گئی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پاکستانی ذرائع ابلاغ کے مطابق موٹروے پولیس کے حکام نے اس حادثے کے بعد مبینہ طور پر غفلت برتنے پر پانچ اہلکاروں کو معطل کر دیا تھا۔

پاکستان کے ضلع بہاولپور کے علاقے احمد پور شرقیہ میں گذشتہ ہفتے آئل ٹینکر کے حادثے کے بعد لگنے والی میں جھلس کر ہلاک ہونے والے افراد کل تعداد 200 سے زیادہ ہوگئی ہے۔

یہ حادثہ گذشتہ اتوار کی صبح اس وقت پیش آیا تھا جب کراچی سے وہاڑی ہزاروں لیٹر تیل لے جانے والا ٹینکر بستی رمضان جوئیہ کے قریب الٹ گیا تھا جس کے بعد مقامی افراد اس سے رسنے والا تیل جمع کرنے کے لیے اکٹھے ہوگئے تھے۔

’یہ کہنا مشکل ہے کہ موقع پر کتنے بچے ہلاک ہوئے‘

بہاولپور: لواحقین کو اپنے پیاروں کی تلاش

آئل ٹینکر میں آتشزدگی سے ہلاکتیں:تصاویر

حادثے کے بعد ابتدائی اطلاچات کے مطابق ہلاکتوں کی تعداد 150 کے قریب بھی تاہم اب حکام کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں پہنچ کر ہلاک ہونے والوں سمیت اس حادثے میں کم از کم 206 افراد ہلاک ہوئے۔

ریسکیو حکان نے بی بی سی کو بتایا تھا کہ آگ لگنے کی وجہ ایک شخص کے الٹے ہوئے ٹینکر کے قریب سگریٹ جلانے لگی تھی۔

ادھر پاکستانی ذرائع ابلاغ کے مطابق موٹروے پولیس کے حکام نے اس حادثے کے بعد مبینہ طور پر غفلت برتنے پر پانچ اہلکاروں کو معطل کر دیا تھا۔

پاکستانی پولیس نے اس معاملے کا مقدمہ بھی درج کیا جس میں ٹینکر کے مالک، مینیجر اور ڈرائیور پر غفلت برتنے کا الزام عائد کرتے ہوئے انھیں حادثے کا ذمہ دار قرار دیا گیا۔

طبی حکام کا کہنا ہے کہ کچھ لوگوں کی لاشیں اس قدر جھلس گئی تھیں کہ ان کی شناخت کا واحد طریقہ ڈی این اے ٹیسٹ ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے اس حادثے میں ہلاک ہونے والے 125 افراد کے لیے اجتماعی طور پر جنازہ ادا کیا گیا تھا۔

پولیس ذرائع نے خبر رساں ادارہ اے پی پی کو بتایا ہے کہ ٹینکر 25000 لیٹر تیل کراچی سے لاہور لے جا رہا تھا اور بظاہر ایک موڑ کے دوران اس کا ایک ٹائر پھٹ گیا تھا۔

اسی بارے میں