’عائشہ گلا لئی کی بہن کو نشانہ نہ بنایا جائے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

پاکستان تحریکِ انصاف کے رہنما عمران خان نے اپنے سپورٹرز سے درخواست کی ہے کہ پارٹی کو چھوڑنے کا اعلان کرنے والی پاکستان تحریکِ انصاف کی ایم این اے عائشہ گلالئی کی بہن کو نشانہ نہ بنایا جائے۔

جمعرات کو اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں سربراہ تحریکِ انصاف نے لکھا ہے کہ ' میں پی ٹی آئی کے حمایتیوں سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ عائشہ گلالئی کی بہن کو نشانہ بنانے سے اجتناب کریں۔'

پارٹی کے رہنماؤں اور کارکنوں کی جانب سے عائشہ گلالئی کی بہن ماریہ تور پکئی جو سکواش کی کھلاڑی ہیں، کے لباس کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

خیال رہے کہ عائشہ گلالئی کی جانب سے عمران خان پر سنگین الزامات لگانے کے بعد پاکستان تحریکِ انصاف اور پارٹی کے کارکنوں کی جانب سے انتہائی غصے کا اظہار کیا گیا ہے۔

ان الزامات کے سامنے آنے کے فوراً بعد ہی پی ٹی آئی کا موقف رہا ہے کہ یہ سب کچھ مسلم لیگ نون کی ایما پر کیا جا رہا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter

آج عمران خان نے بھی اپنی ایک ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ 'جب انھیں نظر آ رہا ہے کہ مجھے نا اہل کروانے کی ان کی کوششیں ناکام ہو رہی ہیں، تو مسلم لیگ ن وہ کر رہی ہے جس کے لیے وہ مشہور ہے۔'

عمران خان نے یہ الزام بھی عائد کیا ہے کہ خیبر پختون خواہ میں پی ٹی آئی کے اسمبلی ارکان کی وفاداریاں خرید کر صوبے میں تحریکِ انصاف کی حکومت کو گرانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

خیال رہے کہ عائشہ گلا لئی کی جانب سے الزامات سامنے آنے بعد پی ٹی آئی لیڈر شپ کی جانب سے یہ الزام لگایا گیا ہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما امیر مقام نے بھاری رقم دے کر عائشہ گلا لئی سے یہ بیان دلوایا ہے۔

ادھر امیر مقام نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان تمام الزامات کی ترید کی ہے۔

اسی بارے میں