سوات کی سکھ برادری
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

روایتی پختون معاشرے میں رچے بسے سوات کے سکھوں کی زندگی

ستر سال پہلے پاکستان مسلم اقلیت کے حقوق کے لیےبنایا گیا۔ لیکن تقسیم ہند کے بعد اس نئے ملک میں اقلیتوں کی زندگی کیسی رہی۔ بی بی سی اردو کی شمائلہ جعفری نے اس حوالے سے انٹرویوز کی ایک خصوصی سیریز ریکارڈ کی ہے جس میں مختلف اقیلیتوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی زندگیوں اور حالات پر نظر ڈالی گئی ہے۔ آج کا انٹرویو سوات میں بسنے والے ایک سکھ بنسری لعل کا ہے۔ سوات پر دوہزار نو میں طالبان نے قبضہ کرلیا تھا۔ اس دوران سوات میں بسنے والے سکھ خاندانوں نے عارضی طور پر دوسرے لوگوں کی طرح اپنے علاقے سے ہجرت کی لیکن فوجی آپریشن کے فوری بعد اپنے گھروں کو واپس لوٹ آئے۔ روایتی پختون معاشرے میں رچے بسے سوات کے سکھوں کی زندگی کیسے گزر رہی ہے۔ سنئیے بنسری لعل کی زبانی۔