19 برس تک ’ناکردہ جرم‘ کی سزا کاٹنے کے بعد رہائی
اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

19 برس تک ’ناکردہ جرم‘ کی سزا کاٹنے کے بعد رہائی

پاکستانی عدالتوں میں 19 لاکھ سے زیادہ مقدمات زیرِالتوا ہیں جبکہ ایک اندازے کے مطابق ایک مقدمے کا فیصلہ آنے میں اوسطاً 15 سے 20 سال کا عرصہ لگ جاتا ہے۔

ایسا ہی ایک مقدمہ چنیوٹ کی رہائشی رانی بی بی اور ان کے خاندان کا تھا۔ ان پر 1998 میں اپنے شوہر کے قتل کا الزام لگا۔عدالت نے رانی بی بی، ان کے والد، بھائی اور ایک کزن کو عمر قید کی سزا سنائی۔ اب لاہور ہائی کورٹ نے انھیں 19 سال بعد ناکافی شواہد کی بنیاد پر باعزت بری کر دیا ہے۔ ان کی کہانی سنیے انھی کی زبانی۔

فرحت جاوید کی رپورٹ۔