جنوبی وزیرستان: ڈرون حملے میں تین ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption حملے کے بعد گاڑی میں آگ لگ گئی جس سے گاڑی اور لاشیں مکمل طور پر جھلس گئیں

پا کستان کے قبائلی علاقے جنوبی وزیرستان میں حکام کے مطابق مُلا نذیر گروپ کے ایک کمانڈر سمیت تین مبینہ عسکریت پسند

ایک ڈرون حملے میں ہلاک ہوگئے ہیں۔

پولٹیکل حکام کا کہنا ہے کہ امریکی جاسوس طیاروں نے جمعہ کی دوپہر وانا سے کوئی پچیس کلومیٹر دور مغرب کی جانب تحصیل برمل میں افغان سرحد کے قریب شدت پسندوں کی ایک مشتبہ گاڑی پر دو میزائل داغے جس کے نتیجے میں تین شدت پسند ہلاک ہو گئے ہیں۔

نامہ نگار دلاور خان وزیر کے مطابق مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ یہ ڈرون حملہ موسٰی نیکہ زیارت کے قریب اس وقت ہوا جب مُلا نذیر گروپ کے ایک کمانڈر حلیم اللہ ایک گاڑی میں انگور اڈہ سے وانا کی جانب جا رہے تھے۔

مقامی لوگوں کے مطابق ڈرون حملے میں حلیم اللہ اور ان کے دو ساتھی موقع پر ہلاک ہوگئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حملے کے بعد گاڑی میں آگ لگ گئی جس سے گاڑی اور لاشیں مکمل طور پر جھلس گئی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ دھماکہ ہوتے ہی انگور اڈہ بازار سے درجنوں لوگ وہاں پہنچ گئے اور لاشوں کوگاڑی سے نکال کر وانا کی جانب روانہ کر دیا گیا۔

خیال رہے کہ یہ امریکی حملہ ایک ایسے وقت ہوا ہے جب جمعرات کو اسلام آباد میں آل پارٹی کانفرنس منعقد ہوئی تھی اور اس کے بعد قبائلی علاقے میں ہونے والا یہ پہلا ڈرون حملہ ہے۔

اسی بارے میں