چارسدہ:پولیس ناکے پر دھماکہ، اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ہ یہ علاقہ مہمند ایجنسی کے بالکل قریب واقع ہے

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخواہ کے ضلع چارسدہ میں ایک عارضی پولیس چیک پوسٹ کے قریب ہونے والے دھماکے میں ایک اہلکار ہلاک ہوگیا ہے۔

چارسدہ پولیس کے ایک اہلکار بہرامن نے بی بی سی کے نامہ نگار دلاور خان وزیر کو بتایا کہ یہ واقعہ سینچر کی صبح پیش آیا ہے۔

ان کے مطابق تحصیل شب قدر میں شہر سے بارہ کلومیٹر دور مغرب کی جانب مہمند ایجنسی کے سرحدی علاقے میں ایک پولیس ناکے کے قریب اس وقت ایک زوردار دھماکہ ہوا جب ناکے پر تقریباً بارہ پولیس اہلکار ڈیوٹی دے رہے تھے۔

اہلکار کا کہنا تھا کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ نامعلوم شدت پسندوں نے رات کی تاریکی میں پولیس ناکے کے قریب مٹی کے بنے ہوئے سپیڈ بریکر میں بارودی مواد نصب کیا تھا جو سنیچر کی صُبح نو بجے کے قریب پھٹ گیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ علاقہ مہمند ایجنسی کے بالکل قریب واقع ہے۔

اس واقعہ کے بعد پولیس کی بھاری نفری علاقے میں پہنچ گئی تھی اور قریبی علاقے میں تلاشی بھی لی لیکن کسی قسم کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز ضلع چارسدہ سے متصل ضلع مردان میں بھی ایک لڑکیوں کے سکول میں نامعلوم شدت پسندوں نے دو دھماکے کیے تھے جس سے سکول مکمل طور پر تباہ ہوگیا تھا۔

حکام کے مطابق عید کے بعد سے اس علاقے میں اس قسم کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔

اسی بارے میں