کرم: چیک پوسٹ پر حملہ، ایک اہلکار ہلاک

پاک فوج تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ’سکیورٹی فورسز کے اہلکاروں نے جوابی کارروائی کی جس میں شدت پسندوں کا جانی نقصان ہوا ہے‘

پاکستان کے قبائلی علاقے کرم ایجنسی میں حکام کے مطابق شدت پسندوں نے سکیورٹی فورسز کی ایک چوکی پر حملے میں ایک اہلکار ہلاک اور دو زخمی ہوئے ہیں۔

سیکیورٹی فورسز کے اہلکار نے بتایا کہ سکیورٹی فورسز کی جوابی کارروائی میں شدت پسندوں کے جانی نقصان کی اطلاع ہے۔

یہ واقعہ جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب سنٹرل کرم ایجنسی کے علاقے ڈوگر میں پیش آیا ہے۔ اہلکاروں نے بتایا ہے کہ شدت پسندوں نے چوکی پر فائرنگ کی جس سے ایک اہلکار ہلاک اور کم سے کم دو زخمی ہوئے ہیں۔

اہلکار نے بتایا کہ فائرنگ کے بعد سکیورٹی فورسز کے اہلکاروں نے جوابی کارروائی کی جس میں شدت پسندوں کا جانی نقصان تو ہوا ہے لیکن اس کی تعداد کا کوئی علم نہیں ہے۔

کرم ایجنسی سے ذرائع کا کہنا ہے کہ جوابی کارروائی میں چھ شدت پسند ہلاک ہوئے ہیں لیکن سرکاری سطح پر اس کی تصدیق نہیں ہو سکی۔

مقامی ذرائع نے بتایا ہے کہ کرم ایجنسی اور اورکزئی ایجنسی کے کچھ علاقوں میں چند روز سے کشیدگی پائی جاتی ہے۔ ان علاقوں میں شدت پسندوں اور سکیورٹی فورس کے اہلکاروں کے درمیان جھڑپیں ہوئی ہیں۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ چار روز میں اب تک سیکیورٹی فورسز کے دو اہلکار ہلاک اور آٹھ زخمی ہو چکے ہیں جبکہ دو درجن کے لگ بھگ شدت پسند ہلاک ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں