مشرف کےریڈ وارنٹ کے لیے کارروائی شروع

پاکستان کے وزیر داخلہ رحمان ملک نے کہا ہے کہ حکومت نے سابق فوجی صدر جنرل پرویز مشرف سمیت بلوچ رہنما اکبر بگٹی کے قتل کے دوسرے ملزمان کے انٹرپول سے ریڈ وارنٹ جاری کرانے کے لیے متعلقہ حکام کو ضروری کارروائی شروع کرنے کی ہدایت کی ہے۔ بلوچستان کی ہائی کورٹ نے یکم نومبر کو اپنے حکم میں کہا تھا کہ اس مقدمے میں مطلوب بیرون ملک مقیم تمام ملزمان کی پاکستان واپسی کے لیے کارروائی تیز کی جائے۔ پاکستان کے وزیر داخلہ رحمان ملک نےاسلام آباد میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان ہائی کورٹ کی حکم پر عمل کیا جائے گا۔ ’بلوچستان ہائی کورٹ کی طرف سے ہمیں جو بھی ہدایات ملی ہیں اس پر ہم پوری طرح سے عمل کر رہے ہیں۔اس میں کسی کو کسی قسم کا شک نہیں ہونا چاہیے۔‘ اکبر بگٹی کے قتل میں تین نامزد ملزمان سابق فوجی صدر ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف، سابق وزیر اعظم شوکت عزیز اور بلوچستان کے سابق وزیر اعلیٰ میر جام یوسف بیرون ملک مقیم ہیں۔ اسلام آباد میں ہمارے نامہ نگار ذوالفقار علی کا کہنا ہے کہ سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف لندن میں خود ساختہ جلاوطنی کی زندگی گذار رہے ہیں جبکہ شوکت عزیز امریکہ اور میر جام یوسف دبئی میں مقیم ہیں۔ ان ملزمان کے خلاف بلوچستان کی عدالت پہلے ہی وارنٹ گرفتاری جاری کرچکی ہے۔