وزارت خارجہ اور دفاع کے سیکریٹریز طلب

پاکستان اسمبلی تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اجلاس میں وزارت خارجہ اور دفاع کے سیکریٹریز سے بریفنگ لیں گے: رضا ربانی

پاکستان کے پارلیمان کی قومی سلامتی کے بارے میں خصوصی کمیٹی نے سابق امریکی کمانڈر مائیک مولن کو بھیجے گئے متنازعہ مراسلے کی چھان بین کے لیے وزارت خارجہ اور وزارت دفاع کے سیکریٹریز کو بریفنگ کے لیے طلب کرنےکا فیصلہ کیا ہے۔

یہ فیصلہ جمعہ کو حکمران پیپلز پارٹی کے سرکردہ رہنما میاں رضا ربانی جو اس کمیٹی کے سربراہ بھی ہیں ان کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں کیا گیا۔

اجلاس میں کیے گئے فیصلوں کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے میاں رضا ربانی نے صحافیوں کو بتایا کہ کمیٹی کا آئندہ اجلاس محرم کے بعد منعقد ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ اس اجلاس میں وزارت خارجہ اور دفاع کے سیکریٹریز سے بریفنگ لیں گے۔

اسلام آباد میں ہمارے نامہ نگار اعجاز مہر کو اجلاس میں شریک ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں بعض اراکین نے آئی ایس آئی کے سربراہ کو بلانے کی تجویز پیش کی جس پر کچھ اراکین نے اس کی مخالفت کی اور طے پایا کہ سیکریٹری دفاع کو بلایا جائے گا۔

میاں رضا ربانی نے بتایا کہ بلوچستان میں امن و امان کی خراب صورتحال کے بارے میں اجلاس میں تشویش ظاہر کی گئی اور طے پایا ہے کہ قومی سلامتی کے متعلق پارلیمان کی اس کمیٹی کا خصوصی اجلاس صرف بلوچستان کے بارے میں جلد منعقد ہوگا۔

اجلاس میں شریک جماعت اسلامی کے سینیٹر پروفیسر خورشید احمد نے رابطہ کرنے پر بی بی سی کو بتایا کہ اجلاس میں ڈرون حملوں پر بھی تشویش ظاہر کی گئی اور طے پایا کہ اس بارے میں سیکریٹری دفاع سے بریفنگ کے دوران بات ہوگی۔

ان کے بقول دبئی ایئر شو کے موقع پر پاک فضائیہ کے سربراہ نے جو دہشت گردی کے حلاف جنگ میں دس سے پندرہ فیصد تک پیش رفت کے بارے میں بیان دیا ہے اس بارے میں بھی سیکریٹری دفاع سے بات ہوگی اور ہوسکتا ہے کہ ان کے ہمراہ فضائیہ کے سینئر افسر بھی آئیں۔

ایک سوال کے جواب میں پروفیسر خورشید احمد نے کہا کہ سیکریٹری دفاع کی بریفنگ کے بعد اگر ضرورت پڑی تو پھر آئی ایس آئی کے سربراہ کو بلانے کے بارے میں بھی غور کیا جاسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں ٹارگٹ کلنگ اور سیاسی کارکنوں کے اغوا اور ان کی مسخ شدہ لاشیں ملنے کے بارے میں فرنٹیئر کور اور بلوچستان پولیس کے سربراہان اور چیف سیکریٹری بلوچستان کو بریفنگ کے لیے بلایا جائے گا۔

اسی بارے میں