عمران خان کی جلسے کے لیے کراچی آمد

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان پچیس دسمبر کو مجوزہ جلسے سے تین روز پہلے کراچی پہنچ گئے ہیں، ان کے ہمراہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور دیگر رہنما بھی آئے ہیں۔

کراچی ائرپورٹ پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان نے دعویٰ کیا کہ کراچی کا جلسہ لاہور کے جلسے سے بھی بڑا ہوگا اور وہ کراچی امن کا پیغام لیکر آئے ہیں۔

جب ان سے سوال کیا گیا کہ اس جلسے میں کتنی کرسیاں لگائی جائیں تو عمران خان نے صحافیوں کو مشورہ دیا کہ وہ خود آ کر دیکھ لیں۔

بقول ان کے اس جلسے کے بعد لوگوں کا ایک بڑا ریلا تحریک انصاف میں شامل ہوگا، جن میں حکمران پیپلز پارٹی کے لوگ بھی شامل ہوں گے۔

کراچی میں محمد علی جناح کے مزار کے سامنے ایک پارک میں اس جلسے کا انتظام کیا گیا ہے۔

عمران خان کا کہنا ہے کہ مقررہ جگہ پر ہی جلسہ کیا جائے گا، سکیورٹی فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے مگر اس کے ساتھ انہوں نے اپنے طور پر بھی اس کا بندوبست کر رکھا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں عمران خان کے کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف نہیں مسلم لیگ نواز درصل کنگز پارٹی ہے۔

دوسری جانب کراچی کے مختلف علاقوں اور خاص طور پر پوش علاقوں میں عمران خان کی ہورڈنگس اور بینر لگائے گئے ہیں۔

اسی بارے میں