نواز لیگ پنجاب کے نائب صدر مستعفی

میانوالی سے مسلم لیگ نون پنجاب کے نائب صدر انعام اللہ خاں نیازی نے اپنے بھائی اور دیگر کارکنوں سمیت جاوید ہاشمی کے نقشِ قدم پر چلتے ہوئے پارٹی رکنیت سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

مسلم لیگ نون کے رہنماانعام اللہ نیازی نے اپنے بھائی سابق رکن اسمبلی نجیب اللہ خان کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ پارٹی قیادت کی ناانصافیوں اور ظلم و ستم کے خلاف احتجاجاً مستعفی ہورہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وہ اور جاوید ہاشمی بارش کے پہلے قطرے ہیں۔

انعام اللہ نیازی نے کہا کہ چند مفاد پرست عناصر نے مسلم لیگ نون کو یرغمال بنا رکھا ہے اور کارکنوں کی تذلیل کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس روز تحریک حقوق میانوالی کے جلوس کو پولیس کے ذریعے کچلنے کی کوشش کی گئی اسی وقت انہوں نے پارٹی چھوڑنے کا فیصلہ کرلیا تھا۔

انعام اللہ نیازی تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے رشتے دار بھی ہیں لیکن انہوں نے فی الحال کسی پارٹی میں شمولیت کااعلان نہیں کیا۔

پارٹی سے مستعفی ہونے والے انعام اللہ خان نیازی نے پیشنگوئی کی ہے کہ اگلے دس روز کے اندر مسلم لیگ نون میں ایک بھونچال آنے والا ہے۔ ادھر مسلم لیگی کارکنوں کا پارٹی چھوڑنے کا سلسلہ جاری ہے۔

مسلم لیگ نون کی مرکزی کونسل کے رکن اور تاجر رہنما محمد نعیم میر نے بھی پارٹی چھوڑ دی ہے۔ انہوں نے اپنے بیان میں حمزہ شہباز شریف کے رویے کو ناقابل برداشت قرار دیا اور کہا کہ انہیں ہر موقع پر یہ احساس دلایا گیا کہ پارٹی میں ان کی حثیت کمی کمین اور شودر کی سی ہے۔

ملتان میں مسلم لیگ نون اور مسلم لیگ قاف کے چند مقامی رہنماؤں نے مخدوم جاوید ہاشمی کی موجودگی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔

اسی بارے میں