بلوچستان: فرنٹیئر کور کے تین اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ

بلوچستان کے علاقے ڈیرہ بگٹی میں بارودی سرنگ کے دھماکے میں فرنٹیئرکور کے تین اہلکار ہلاک اور دو زخمی ہو گئے ہیں۔

کوئٹہ سے تین سو کلومیٹر دور مشر ق میں واقع ضلع ڈیرہ بگٹی میں آس ریلی کے مقام پر آج شام اس وقت ایک زوردار دھماکہ ہوا ہے جب فرنٹیئرکور کی گاڑی بارودی سرنگ سے ٹکراگئی جس کے نتیجے میں ایف سی کے تین اہلکار موقع پر ہلاک اور دو زخمی ہوئے ہیں۔

کوئٹہ میں ایف سی ذرائع نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بی بی سی کو بتایا کہ نامعلوم افراد نے سڑک کے کنارے بارودی سرنگ نصب کی تھی اور جب ایف سی کی گاڑی وہاں سے گزر رہی تھی تواچانک دھماکہ ہواجس سے ایف سی کی ایک گاڑی تباہ ہو گئی ہے۔

سوئی سے مقامی صحافیوں کے مطابق بارودی سرنگ سے دھماکہ اس وقت ہوا جب علاقے میں گیس اور تیل تلاش کرنے والے کمپنی کے اہلکار ایف سی کی نگرانی میں ایک کانوائے کی صورت میں آس ریلی سے سوئی کی طرف جا رہے تھے کہ آچانک بارودی سرنگ سے دھماکہ ہوا۔

دوسری جانب نامعلوم افراد نے آج پیر کوہ کے علاقے میں ایک اور گیس پائپ لائن کو دھماکہ خیز مواد سے اڑیا ہے جس سے سوئی گیس پلانٹ کوگیس کے سپلائی معطل ہوئی ہے۔ آخری اطلاع تک کسی تنظیم نے ان دونوں واقعات کی ذمہ داری قبول نہیں کی تھی۔

تاہم ماضی میں ڈیرہ بگٹی اور سوئی میں سیکورٹی فورسز اور قومی تنصیبات پر ہونے والے زیادہ ترحملوں کی ذمہ داری بلوچ ری پبلیکن آرمی نے قبول کی ہے۔