طالبان رہنماء کو ہلاک کرنے کا دعویٰ

کراچی پولیس(فائل فوٹو) تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

کراچی میں سی آئی ڈ ی پولیس نے تحریکِ طالبان بلوچستان کے امیر سید یاسین شاہ عرف سائیں کو ایک مبینہ مقابلے میں ہلاک کرنے کا دعوٰی کیا ہے۔

سی آئی ڈی کے ایس ایس پی فیاض خان نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ ملزم قتل سمیت کراچی میں ہونے والی دہشت گردی کی متعدد وارداتوں اورگزشتہ دنوں موبائل فون فرنچائزوں پر ہونے والے حملوں میں بھی ملوث تھا۔

فیاض خان نے واقعے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ سینیچر کی صبح کراچی کی مصروف شاہراہ راشد منہاس روڈ پر جب پولیس نے ایک مشکوک گاڑی کو روکنے کی کوشش کی تو کار سے پولیس پر فائرنگ کی گئی جس سے پولیس کے دو جوان ارشد اور واجد زخمی ہوگئے۔

بعد ازاں پولیس کی جوابی فائرنگ سے یاسین شاہ زخمی ہوگئے جنہیں فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا مگر وہ راستے ہی میں دم توڑ گئے۔

فیاض خان کے مطابق کارروائی کے دوران یاسین شاہ کا ایک ساتھی قادر گرفتار ہوگیا ہے جبکہ ملزمان کے قبضے سے دو دستی بم اور دو پستول بھی برآمد ہوئے ہیں۔ ملزم سے مزید تفتیش کی جا رہی ہے۔

اسی بارے میں