بلوچستان: فائرنگ سے سات مزدور ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ہلاک ہونے والے مزدوروں میں سے زیادہ تر کا تعلق صوبہ سندھ سے بتایا جاتا ہے:ذرائع

بلوچستان کے علاقے تربت میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک تعمیراتی کمپنی کے سات مزدور ہلاک اور دو زخمی ہو گئے ہیں۔

فائرنگ کے بعد ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

کوئٹہ سے بی بی سی کے نامہ نگار ایوب ترین کے مطابق منگل کی شام کو تربت کے علاقے بلیدہ میں مسکین کے مقام پر نامعلوم مسلح افراد نے تربت سے بلیدہ تک نئی سڑک بنانے والے ایک تعمیراتی کمپنی کے کیمپ پر خود کار ہتھیاروں سے حملہ کیا۔

اس حملے میں پانچ مزدور موقع پر ہی ہلاک اور چار زخمی ہوئے ہیں جنہیں فوری طور پر سول ہسپتال تربت منتقل کر دیا گیا جہاں مزید دو مزدور دم توڑ گئے۔

ذرائع کے مطابق ہلاک اور زخمی ہونے والے مزدوروں میں سے زیادہ تر کا تعلق صوبہ سندھ سے بتایا جاتا ہے۔

تربت میں حکام نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایاہے کہ حملہ آوروں نے تعمیراتی کمپنی کی تین گاڑیوں اور مشنیری کو بھی نذر آتش کیا ہے۔

اس واقعہ کے بعد بڑے پیمانے پر ایف سی اور پولیس کی نفری جائے وقوعہ کی طرف روانہ کردی گئی۔ تاہم آخری اطلاع تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی تھی اور نہ ہی کسی نے واقعہ کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

ادھر بلوچ لبریشن فرنٹ کے ترجمان ڈوڈا بلوچ نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ پہلے بھی کمپنیوں سے کہا گیا تھا کہ وہ صوبے میں تیل اور گیس کی تلاش کا کام نہ کریں اور اگر یہ کام جاری رہا تو حملے بھی ہوتے رہیں گے۔