شہباز بھٹی قتل کیس کا ایک ملزم گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شہباز بھٹی گُزشتہ برس دو مارچ کو اسلام آباد میں ایک قاتلانہ حملے میں مارے گئے تھے

اسلام آباد پولیس نے اقلیتی امور کے وفاقی وزیر شہباز بھٹی کے قتل کے مقدمے میں کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے ملزم محمد عابد کوگرفتار کر لیا ہے۔

ملزم گزشتہ کچھ عرصے سے بیرون ملک مقیم تھا اور اُس کے متعلقہ عدلت سے ریڈ وارنٹ بھی حاصل کیاگیا تھا۔

اس مقدمے میں ایک اور ملزم ضیاءالرحمن کے بھی ریڈ وارنٹ جاری کیےگئے ہیں اور اُنہیں اس مقدمے میں اشتہاری بھی قرار دیا گیا ہے۔

شہباز بھٹی کو گزشتہ برس دو مارچ کو اسلام آباد کے سیکٹر آئی ایٹ میں نامعلوم مسلح افراد نے اُس وقت گولی مار کر ہلاک کردیا جب وہ سرکاری گاڑی میں سوار ہوکر اپنےگھر سے دفتر کی جانب جا رہے تھے۔

پولیس کو جائے حادثہ سے کچھ پمفلٹ بھی ملے تھے جس میں درج تھا کہ توہین رسالت کے قانون میں ترمیم کرنے کی کوشش کرنے والوں کا انجام یہی ہوگا۔ شہباز بھٹی اُن افراد میں شامل تھے جو توہین رسالت کے قانون میں ترمیم کا مطالبہ کر رہے تھے۔

اس سے پہلے گورنر پنجاب سلمان تاثیر کو بھی اسلام آباد میں اُن کی سکیورٹی پر مامور پنجاب پولیس کے اہلکار ممتاز قادری نے سرکاری اسلحے سے گولیاں مار کر ہلاک کردیا تھا۔ سلمان تاثیر نے قتل سے کچھ عرصہ پہلے شیخوپورہ جیل میں توہین رسالت کے مقدمے میں موت کی سزا پانے والی آسیہ سے ملاقات کی تھی۔

نامہ نگار شہزاد ملک کے مطابق مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ محمد عابد کا تعلق کالعدم تنظیم سپاہ صحابہ پاکستان سے ہے اور وہ شدت پسندی کے دیگر واقعات میں پنجاب اور سندھ پولیس کو مطلوب ہے۔

ملزم عابد پیر اور منگل کی درمیانی شب لاہور ایئرپورٹ پر اُترے تو اسلام آباد پولیس کے اہلکار جو پہلے ہی ایئرپورٹ پر موجود تھے اُنہیں حراست میں لیکر اسلام آباد لے آئے۔

محمد عابد کو پولیس کے سخت پہرے میں راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ متعلقہ عدالت نے محمد عابد کو سات دن کے جسمانی ریمانڈ پر پولیس کی تحویل میں دے دیا۔

ملزم کو تفتیش کے لیے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے جہاں پر اسلام آباد پولیس اور ایف آئی اے یعنی وفاقی تحقیقاتی ادارے کے اہلکار محمد عابد سے پوچھ گچھ کر رہے ہیں۔

اس تفتیشی ٹیم میں شامل ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ محمد عابد کی گرفتاری ایک شخص نذیر کی نشاندہی پر عمل میں آئی ہے۔ مذکورہ شخص کو کراچی سے گرفتار کیا گیا تھا جس نے نشاندہی کی تھی کہ جس وقت شہباز بھٹی کو قتل کیا گیا تو ملزم محمد عابد موقع پر موجود تھا۔

اسی بارے میں