ڈیرہ بگٹی: حملے میں دو ایف سی اہلکار زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

بلوچستان کے شورش زدہ علاقے ڈیرہ بگٹی میں سکیورٹی فورسز اور بلوچ مزاحمت کاروں کے درمیان ایک جھڑپ میں تین بلوچ مزاحمت کار ہلاک جبکہ ایف سی کے دو اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

ڈیرہ بگٹی شہر سے پچیس کلومیٹر دور پیر سوری کے علاقے میں جمعرات کی شام کو بلوچ مزاحمت کاروں نے فرنٹیئرکور کے ایک قافلے پر خود کار ہتھیاروں سے حملہ کیا۔ اس حملے کے نتیجے میں ایف سی کے دو اہلکار زخمی ہوئے ہیں جنہیں فوری طور پر بذریعہ ہیلی کاپٹر کوئٹہ منتقل کردیاگیا۔

کوئٹہ میں فرنٹیئرکور کے ترجمان مرتضیٰ بیگ کے مطابق حملے کے بعد ایف سی نے جوابی فائرنگ کی جس کے باعث تین مزاحمت کار ہلاک جبکہ کئی حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ فرار ہونے والے مزاحمت کاروں کی تلاش جاری ہے۔

ترجمان نے مزید بتایا کہ ہلاک ہونے والے حملہ آوروں سے بھاری مقدار میں دھماکہ خیز مواد بھی برآمد ہوا۔

ترجمان کے مطابق ہلاک ہونے والے حملہ آور اس سے قبل ماہ جنوری میں سنگسیلا کے مقام پر ایف سی کے چیک پوسٹ پر حملے میں ملوث تھے۔ اس حملے میں ایف سی کے پانچ اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔ اس حملے کی ذمہ داری بلوچ ریپبلکن آرمی نے قبول کی تھی۔

آخری اطلاع تک کسی تنظیم نے جمعرات کو ہونے والے حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔

اسی بارے میں