اورکزئی:شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر بمباری

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

پاکستان کے قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی میں حکام کے مطابق سکیورٹی فورسز نے شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر بمباری کر کے چار ٹھکانے تباہ کر دیے ہیں۔

سکیورٹی فورسز کے حکام نے بتایا ہے کہ صبح سویرے اپر اورکزئی ایجنسی کے علاقے غلجو میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا گیا ہے جبکہ ایسی اطلاعات بھی ہیں کہ بعض مقامات پر فضائی بمباری بھی کی گئی ہے۔

اہلکاروں نے بتایا کہ اس کارروائی میں شدت پسندوں کے چار ٹھکانے تباہ کر دیے گئے ہیں۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اس کارروائی میں پندرہ سے زیادہ شدت پسند ہلاک اور بیس کے لگ بھگ زخمی ہوئے ہیں لیکن سکیورٹی اہلکاروں نے ہلاکتوں کی تعداد کی تصدیق نہیں کی ہے۔

نامہ نگار عزیز اللہ خان کے مطابق پولیٹکل انتظامیہ کے حکام کا کہنا ہے کہ اس کارروائی میں ہلاکتوں کی تصدیق اس لیے بھی نہیں ہو سکتی کیونکہ کہ یہ دور دراز علاقہ ہے اور یہاں ٹیلیفون سے رابطہ نہیں کیا جا سکتا۔ انھوں نے کہا کہ اس بارے میں تفصیل ایک یا دو روز بعد موصول ہوتی ہے۔

اورکزئی ایجنسی میں فوجی کارروائی کو پاکستان میں اب تک قبائلی علاقوں میں کی جانے والی کارروائیوں میں سب سے مشکل کارروائی سمجھا جاتا ہے۔ یہ علاقہ انتہائی سرد پہاڑی سلسلے پر مشتمل ہے ۔

ایسی اطلاعات بھی ہیں اپر اورکزئی ایجنسی کے ان علاقوں جیسے غلجو ، سما بازار ، برمیلا اور کرم ایجنسی کے بعض علاقے ایسے مقامات ہیں جہاں پولیٹکل انتظامیہ کا کنٹرول نہ ہونے کے برابر ہے۔ ان علاقوں میں کافی عرصے سے سکیورٹی اہلکار فوجی آپریشن کر رہے ہیں اور عموماً ان علاقوں سے شدت پسندوں کی ہلاکت کے دعوے بھی کیے جاتے ہیں لیکن ان کی آزاد ذرائع سے تصدیق نہیں ہو پاتی۔

اسی بارے میں