اورکزئی ایجنسی: گیارہ شدت پسند ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کے قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی میں سکیورٹی فورسز نے شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کی ہے جس میں حکام کے مطابق گیارہ شدت پسند ہلاک اور بیس سے زیادہ زخمی ہو گئے۔

مقامی انتظامیہ کے حکام نے نامہ نگار دلاورخان وزیر کو بتایا ہے کہ سنیچر کو اپراورکزئی ایجنسی کے تین مختلف علاقوں میں شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کی گئی جس میں جیٹ طیاروں کے علاوہ بھاری توپ خانے کو استمعال کیا گیا۔

اہلکار کے مطابق اس کارروائی میں شدت پسندوں کے چار ٹھکانے بھی تباہ کر دیے گئے۔

ان کا کہنا تھا کہ آٹھ شدت پسند جیٹ طیاروں کی بمباری جبکہ تین شدت پسند زمینی کارروائی میں مارے گئے۔

اہلکار نے بتایا کہ خدی کے علاقے میں موجود شدت پسندوں کے دو ٹھکانے پر جیٹ طیاروں نے بمباری کی جبکہ ماموزئی اور ڈبوری میں سکیورٹی فورسز نے زمینی کارروائی کی۔

انہوں نے بتایا کہ ڈبوری اور ماموزئی کے علاقے میں شدت پسندوں نے سکیورٹی فورسز پر بھی حملے کیے لیکن اس میں کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔

واضح رہے کہ اورکزئی ایجنسی میں گزشتہ دو سالوں سے شدت پسندوں کے خلاف غیر اعلانیہ کارروائی جاری ہے جس کی وجہ سے لاکھوں افراد نقل مکانی کر کے خیبر پختونخوا کے مختلف علاقوں میں منتقل ہوگئے ہیں۔

اس عرصے کے دوران سکیورٹی فورسز کے علاوہ عام شہریوں پر ہونے والے حملوں میں درجنوں عام شہری بھی ہلاک ہو چکے ہیں۔

اسی بارے میں