مردان سے چار نامعلوم افراد کی لاشیں برآمد

آخری وقت اشاعت:  منگل 20 مارچ 2012 ,‭ 07:45 GMT 12:45 PST

پاکستان کے صوبے خیبر پختونخوا کے شمالی ضلع مردن میں ایک کھیت سے چار نامعلوم افراد کی لاشیں ملی ہیں۔

چاروں لاشوں پر کسی قسم کے تشدد کے نشانات موجود نہیں ہیں۔

مردان میں ایک پولیس افسر ہدایت اللہ نے بی بی سی کو بتایا کہ منگل کی صُبح شہر سے کوئی چھ کلومیٹر دور مغرب کی جانب صدر تھانے کے حدود میں علاقہ شاہ بیگ میں ایک کھیت سے چار نامعلوم افراد کی لاشیں ملی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ لاشوں پر تشدد کے نشانات موجود نہیں ہیں۔

اہلکار نے نامہ نگار دلاورخان وزیر کو بتایا کہ ہلاک ہونے والوں کی عمریں تیس سے پینتیس سال تک معلوم ہو رہی ہیں اور چاروں کی داڑھیاں بھی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ علاقے کے لوگوں نے کسی بھی لاش کی شناخت نہیں کی ہے اس لیے ایسا معلوم ہوتا ہے کہ مرنے والے تمام کے تمام مقامی نہیں۔

اہلکار کا کہنا تھا کہ تینوں کے کپڑوں سے کوئی چیز نہیں ملی ہے اور نہ ہی ان کے پیروں میں جوتے ہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ پولیس نے مردان کے ایک قبرستان میں دفنانے کے انتظامات بھی کیے ہیں اور پوسٹ ماٹم کے بعد ان کو وہاں دفنا دیاجائےگا۔

یادرہے کے اس واقعہ سے دو دن پہلے خیبر ایجنسی کے تحصیل باڑہ میں ایک دن چار اور دوسرے دن چودہ لاشیں ملی تھیں۔البتہ ان لاشوں کی شناخت ہوگئی تھی جو تمام کے تمام مقامی تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔