خاندانوں، رشتہ داروں کی جماعت نہیں: عمران

عمران خان (فائل فوٹو) تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ’تحریک انصاف پاکستان کی پہلی جماعت ہوگی جس کے ممبران جماعت کی قیادت کو چنیں گے‘

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ صدر پاکستان آصف علی زرداری اور میاں نواز شریف دونوں ایک ہیں اور دونوں سمجھوتہ ایکسپریس پر بیٹھے ہیں۔ وہ گزشتہ شام صوبہ پنجاب کے شہر سیالکوٹ میں ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے۔

سیالکوٹ کے سپورٹس سٹیڈیم میں ہونے والے جلسے میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔ جلسے میں نوجوانوں کی تعداد خاص طور پر قابل ذکر تھی جہنوں نے پاکستان تحریک انصاف کے پرچم اٹھا رکھے تھے اور عمران خان کے لیے نعرے لگا رہے تھے۔ اس موقع پر سٹیج پر گیت بھی گائے گئے۔

لاہور سے نامہ نگار علی سلمان نے بتایا کہ عمران خان نے مسلم لیگ ن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ چند ماہ پہلے تک ’گو زرداری گو‘ کا ڈرامہ رچایا جا رہا تھا تو اب پھر دونوں بڑی جماعتوں میں سمجھوتہ ہو گیا ہے۔ انہوں نے مسلم لیگ ن سے پوچھا کہ کیا ملک میں مہنگائی، بے روزگاری کم ہوئی ہے یا ملک سے کرپشن اور چوری کا خاتمہ ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر عوام کو گیس اور بجلی بھی نہیں مل رہی تو مسلم لیگ ن بتائے کہ پھر ’گو زرداری گو‘، ’کم زرداری کم‘ کیسے ہو گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ میاں نواز شریف اور آصف علی زرداری بیسویں ترمیم، سینٹ انتخابات اور ضمنی انتخابات میں اکٹھے ہوگئے لیکن وہ اُن کو بتا دینا چاہتے ہیں کہ اب وہ جو چاہے کر لیں، چاہے امپائر ساتھ ملا لیں یا اپنی مرضی کا الیکشن کمیشن لے آئیں، وہ تحریک انصاف کی سونامی کو نہیں روک سکیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ وہ پاکستان سے کرپشن کو ختم کر کے ایسے ایک امیر ملک بنائیں گے اور ایک شفاف ٹیم لے کر آئیں گے جو ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف پاکستان کی پہلی جماعت ہوگی جس کے ممبران جماعت کی قیادت کو چنیں گے۔ انہوں نے نوجوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ خود بھی تحریک انصاف کے لیڈر بن سکتے ہیں اور قیادت کر سکتے ہیں۔

تحریک انصاف کے سربراہ نے کہا کے ان کی جماعت خاندانوں کی جماعت نہیں ہو گی اور نہ ہی یہ رشتہ داروں کی جماعت ہو گی۔

تحریک انصاف ہفتے کو میانوالی میں جلسہ کر رہی ہے جبکہ سات اپریل کو ایبٹ آباد میں جلسہ کیا جائے گا۔

اسی بارے میں