’سندھ کو پاکستان سے آزاد کروانا ضروری‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption حکومت کی جانب سے ذوالفقار آباد کا منصوبہ سندھیوں کو اقلیت میں بدلنے کی سازش ہے، بشیر قریشی

سندھی قوم پرست جماعت جئے سندھ قومی محاذ یعنی (جسقم) نے یوم پاکستان کے موقع پر کراچی میں آزادی مارچ کا انعقاد کیا جس میں لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

اس موقع پر جئے سندھ قومی محاذ کے چیئرمین بشیر قریشی نے کہا کہ پنجاب نے پاکستان کے نام پر سندھ کے وسائل پر قبضہ کیا ہوا ہے اس لیے سندھ کو پاکستان سے آزاد کروانا ہوگا۔

جمعے کو کراچی میں تبت سینٹر کے مقام پر جئے سندھ قومی محاذ کی جانب سے منعقدہ آزادی مارچ کے اختتام پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ اردو بولنے والوں کو سندھی قوم کا حصہ سمجھتے ہیں اس لیے وہ بھی اس جدوجہد میں ان کے ساتھ تعاون کریں۔

کراچی سے نامہ نگار حسن کاظمی کے مطابق بشیر قریشی نے کہا کہ ملک کا اسی فیصد بجٹ سندھ فراہم کرتا ہے مگر پھر بھی سندھ کو بھوکا رکھا گیا ہے اسی لیے ضروری ہے کے سندھو دیش کو آزاد کروایا جائے۔

بشیر قریشی کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے ذوالفقار آباد کا منصوبہ سندھیوں کو اقلیت میں بدلنے کی سازش ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں تیل اور گیس کی ضروریات کا بڑا حصہ سندھ پورا کرتا ہے۔

انہوں نے الزام لگایا کہ سندھ میں شدت پسندوں کے پیچھے پنجاب کا ہاتھ ہے اور سندھو دیش ہمیشہ ہی سے میدانِ جنگ بنا رہا ہے اسی لیے سندھ کو پاکستان سے آزاد کروانا ضروری ہے۔

اسی بارے میں