کراچی:امن و امان کی صورتحال میں بہتری

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption کراچی میں حالات منگل کے روز ایم کیو ایم کے ایک کارکن کی ہلاکت کے بعد خراب ہوئے۔

کراچی میں جاری تشدد اور بدامنی کے چوتھے روز جمعے کو امن و امان کی صورتحال قدرے سنبھلی ہوئی ہے اور شہر میں معمولات زندگی بحال دکھائی دے رہے ہیں۔

اگرچہ شہر کے مغربی علاقے قضبہ کالونی میں ایک شخص گولی لگنے سے ہلاک ہوا ہے لیکن پولیس حکام نے مقتول کو جرائم پیشہ بتاتے ہوئے اس قتل کو ممکنہ ذاتی جھگڑے کا نتیجہ قرار دیا ہے۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق مقتول کا نام عاشق حسین ہے۔ لیکن شہر کے مغربی حصّے میں پولیس کے سربراہ ڈی آئی جی عمران یعقوب منہاس نے بی بی سی کو بتایا کہ ہلاک ہونے والا شخص عادی جرائم پیشہ بتایا گیا ہے۔

ڈی آئی جی عمران یعقوب کا کہنا ہے کہ ممکن ہے کہ قتل ذاتی دشمنی یا جرائم سے متعلق جھگڑے کا نتیجہ ہو، پولیس ابھی اس کی تفتیش کر رہی ہے۔

منگل کو ایم کیو ایم کے دو اور بدھ کو عوامی نیشنل پارٹی کے ایک کارکن کے قتل کے بعد کراچی تین دن تک قتل و غارت، ہنگامہ آرائی، جلاؤ گھیراؤ اور خوف و ہراس کا شکار رہا۔

مگر جمعے کو صورتحال خاصی مستحکم رہی۔ بازار، دکانیں، تجارتی و کاروباری مراکز اور تعلیمی ادارے معمول کے مطابق کھلے رہے۔

اسی بارے میں