سندھ:ہڑتال کی اپیل پر ملا جلا ردعمل، مزید ایک ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption بدھ کو کراچی کے علاقے قائد آباد میں ایک شخص ہلاک ہوا ہے جس سے مرنے والوں کی تعداد ایک درجن ہوگئی ہے۔

پاکستان کے صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی میں منگل کو مہاجر صوبے کے خلاف نکالی گئی ریلی پر فائرنگ اور حیدرآباد میں جیے سندھ متحدہ محاذ کے لاپتہ ہونے والے جنرل سیکرٹری مظفر بھٹو کی لاش ملنے کے بعد صوبہ سندھ میں بدھ کو ہڑتال کی جا رہی ہے۔

ادھر کراچی کے علاقے قائد آباد میں بدھ کی صبح ایک اور شخص ہلاک ہوا ہے جس سے مرنے والوں کی تعداد ایک درجن ہوگئی ہے۔

ہڑتال کے لیے عوامی تحریک اور جیے سندھ قومی محاذ نے علیحدہ علیحدہ اپیلیں کی تھیں اور اطلاعات کے مطابق کراچی میں جزوی لیکن اندرون سندھ میں ہڑتال زیادہ موثر رہی ہے۔

کراچی میں بی بی سی کے نامہ نگار ریاض سہیل کا کہنا ہے کہ حیدرآباد، نوابشاھ، سکھر، لاڑکانہ، میرپورخاص، بدین سمیت سندھ کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں ہڑتال اور پبلک ٹرانسپورٹ معطل ہے، جبکہ عوامی تحریک، جئے سندھ ترقی پسند پارٹی اور دیگر جماعتوں کی جانب سے احتجاجی مظاہرے کیے جا رہے ہیں۔

مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف نے بھی اس ہڑتال کی حمایت کا اعلان کر رکھا ہے۔

حیدرآباد اور بدین میں عوامی تحریک کی جانب سے احتجاجی مظاہرے کیے گئے ہیں جن میں کراچی میں محبت سندھ ریلی پر فائرنگ کے واقعات اور ہلاکتوں کی تحقیقات کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

حیدرآباد، میرپور خاص تعلیمی بورڈ ، سندھ ، زرعی، مہران اور لیاقت یونیورسٹی میں آج ہونے والےامتحانات بھی ملتوی کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ عدالتوں میں بھی کوئی کارروائی نہیں ہو سکی ہے اور مقدمات کی سماعت ملتوی کر دی گئیں۔

کراچی میں قوم پرست جماعت عوامی تحریک کی ’مہاجر صوبے‘ کے خلاف منگل کو نکالی گئی محبتِ سندھ ریلی پر فائرنگ اور اس کے بعد پیش آنے والے تشدد کے واقعات کے نتیجے میں تین خواتین سمیت کم سےکم گیارہ افراد ہلاک اور پینتیس سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے۔

وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے واقعے کی عدالتی تحقیقات کرانے کا اعلان کیا ہے جبکہ وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک نے ایڈیشنل آئی جی پولیس کی سربراہی میں جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل دے دی ہے۔

کراچی میں ریلی پر حملے کی بابت وزیر اعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ کراچی میں جلوس نکالنے کی اجازت نہیں تھی اور اس بات کی تحقیقات کی جائے گی کہ جلوس کی اجازت کس نے دی۔

اسی بارے میں