صحافی کے قتل کا ملزم ہلاک

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 26 مئ 2012 ,‭ 13:55 GMT 18:55 PST
ولی خان بابر

ولی خان بابر کا قتل الیکٹرانک میڈیا کی آمد کے بعد کراچی میں اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ تھا

کراچی میں پولیس کا کہنا ہے کہ ہفتہ کو مشتبہ افراد سے مقابلے کے دوران ایک صحافی کے قتل میں ملوث مطلوب ملزم ہلاک ہوگیا ہے۔

پولیس کے مطابق ایک نجی ٹیلیویژن کے رپورٹر ولی خان بابر کو گزشتہ سال جنوری میں گولیاں مار کر قتل کردیا گیا تھا۔ ان کے قتل میں ملوث ملزمان میں لیاقت نامی ملزم بھی مطلوب تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ کلفٹن میں سی ویو کے قریب چار مشتبہ افراد سے فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں دو ملزمان اور ایک پولیس اہلکار گولیاں لگنے سے زخمی ہوگئے جنہیں طبی امداد کے لیے قریبی ہسپتال منتقل کیا گیا۔

پولیس افسر شفیق تنولی کا کہنا ہے کہ ہسپتال پہنچ کر ایک مشتبہ شخص زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہلاک ہوگیا جس کی شناخت لیاقت کے نام سے کی گئی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لیاقت شہری حکومت میں ملازم تھے اور وہ ولی خان بابر کے مقدمۂ قتل میں مطلوب تھے۔ پولیس کے بقول لیاقت کی گاڑی ولی خان بابر کے قتل میں استعمال ہوئی تھی۔

کراچی سے نامہ نگار ارمان صابر کے مطابق بلوچستان سے تعلق رکھنے والے نجی ٹی وی چینل کے رپورٹر ولی خان بابر کو کراچی کے علاقے لیاقت آباد میں اپوا سکول کے قریب نامعلوم افراد نے گھات لگا کر گزشتہ برس تیرہ جنوری کو ہلاک کر دیا تھا۔ انہیں بعد ازاں بلوچستان کے شہر ژوب میں سپردخاک کیا گیا تھا۔

پاکستان میں گزشتہ دہائی کے آغاز میں الیکٹرانک میڈیا کی آمد کے بعد کراچی میں اپنی نوعیت کا یہ پہلا واقعہ تھا۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔