’بلدیاتی انتخابات جماعتی بنیاد پر ہوں گے‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

پاکستان کے وفاقی وزیر اطلاعات اور نشریات قمر زمان کائرہ نے واضح کیا ہے کہ ملک میں بلدیاتی انتخابات جماعتی بنیادوں پر ہوں گے اور کسی کو بھی غیر جماعتی بنیادوں پر انتخابات کا انعقاد نہیں کرنے دیا جائے گا۔

کراچی پریس کلب میں منگل کو صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے بلدیاتی انتخابات کرانے کا کہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت انتخابات کرانے کا انتظام کرے جو اس کا آئینی فرض ہے اور ان انتخابات میں پوزیشن واضح ہوجائے گی کہ کون کہاں کھڑا ہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے میثاق جمہوریت کے مطابق ملک کے اندر غیر جماعتی انتخابات نہیں ہوسکتے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی غیر جماعتی انتخابات کا انعقاد نہیں ہونے دے گی کیونکہ غیر جماعتی انتخابات آمریت کی نشانی ہے اس سے جمہوری عمل اور جمہوری ادارے کمزور ہوتے ہیں۔

کراچی میں ہمارے نامہ نگار ریاض سہیل نے بتایا کہ وفاقی وزیر نے پنجاب کے وزیر اعلیٰ شہباز شریف کے مینار پاکستان میں قائم کیمپ پر شدید تنقید کی۔ ’آپ نے ایک کیمپ لگاکر حکومت کا خرچہ بڑھایا ہے کیونکہ آپ کے چار دفاتر پہلے ہی چل رہے ہیں پانچواں دفتر یہ ہے۔ بجلی کے خلاف اعلان جنگ کر رکھا ہے اور خود بجلی چوری کر رہے ہیں کیونکہ اس کیمپ میں سرکاری طور پر میٹر نہیں لگوایا گیا۔‘

قمر زمان کائرہ نے قومی مالیاتی ایوارڈ کی تقسیم کے حوالے سے شہباز شریف کے کردار کی تعریف کی اور کہا کہ اس وقت انہوں نے جو رویہ اختیار کیا ہے اس سے دوسرے صوبوں کے ساتھ محاذ آرائی پیدا ہوگی۔

افغانستان میں نیٹو افواج کی رسد کی بحالی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ دفاعی کمیٹی کو کہا گیا ہے کہ متعلقہ ممالک سے بات کرکے جلد سفارشات پیش کی جائیں جس کی روشنی میں فیصلہ کیا جائے گا۔

بھارت کی جانب سے پاکستان پر نئی ویزہ پالیسی تسلیم نے کرنے کے بارے میں وفاقی وزیر اطلاعات نشریات کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک میں تجارتی اور سفارتی تعلقات بحال کرنے اور دیرینہ مسائل حل کرنے کی خواہش موجود ہے، چھوٹی چھوٹی رکاوٹیں آتی رہتی ہیں۔

اسی بارے میں