کراچی: مختلف واقعات میں چھ افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption پولیس کو لیاری ایکسپریس وے سے بوری میں بند دو لاشیں ملی ہیں

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں حکام کے مطابق مختلف واقعات میں چھ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

ہلاک ہونے والوں میں شہزاد چارلی بھی شامل ہیں جن کی گرفتاری پر تین لاکھ روپے انعام تجویز کیا گیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ہاکس بے روڈ پر مشرف کالونی میں اتوار کی دوپہر کو موٹر سائیکل پر سوار مسلح افراد کی فائرنگ میں چار افراد ہلاک ہوگئے۔

نامہ نگار ریاض سہیل کے مطابق پولیس نے اس واقعے کو گینگ وار کا نتیجہ قرار دیا ہے۔

ایس ایچ او ماڑیپور کے مطابق رحمان ڈکیت کی ہلاکت کے بعد ان کا گروپ دو حصوں میں تقسیم ہوگیا تھا، ایک گروپ کی قیادت شہزاد چارلی اور دوسرے گروپ کی سربراہی شیراز کامریڈ کر رہے تھے۔

پولیس کے مطابق حملے سے پہلے دونوں گروہوں میں مذاکرات ہوئے تھے جو کامیاب نہیں ہوئے، جس کے بعد موٹر سائیکل سواروں نے فائرنگ کی اور نتیجے میں شہزاد چارلی،اسلام ، کمال اور وسیم نامی ملزم ہلاک ہوگئے۔

دوسری جانب پولیس کو لیاری ایکسپریس وے سے بوری میں بند دو لاشیں ملی ہیں۔

لاشوں کی شناخت کاشف اور شاہد کے نام سے ہوئی ہے، لیاقت آباد پولیس کا کہنا ہے کہ دونوں کے جسم پر تشدد کے نشانات موجود ہیں۔

اسی بارے میں