’بالادست آئین پارلیمان نے ہی بنایا ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption موجودہ حکومت نے پارلیمنٹ کی بالادستی کو قائم کیا ہے: یوسف رضا گیلانی

سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ ملک کا آئین ضرور سپریم ہے تاہم اسے بنانے والی پارلیمنٹ ہے اور موجودہ حکومت نے آئین کو اس کی اصل حالت میں بحال کیا ہے۔

انہوں نے یہ بات اتوار کو اپنے آبائی شہر ملتان روانہ ہونے سے قبل لاہور ریلوے سٹیشن پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہی۔

سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ پارلیمنٹ نے تہتر کا آئین بنایا اور موجودہ حکومت نے اس آئین کو اس کی اصل حالت میں بحال کر کے پارلیمنٹ کی بالادستی کو قائم کیا ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں پاکستان کی سپریم کورٹ کے چیف جسٹس جناب افتخار محمد چودھری نے کہا تھا کہ ملک میں پارلیمنٹ نہیں بلکہ آئین بالادست ہے اور اس بارے میں غلط فہمی دور ہونی چاہیے۔

یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ اس وقت بھی آئین موجود تھا جب اعلیٰ عدلیہ کے جج نظر بند تھے لیکن ان کی نظربندی پارلیمنٹ نے ختم کی۔ سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ’جب ملک میں جمہوریت آئی اور پارلیمنٹ کی بالادستی قائم ہوئی اور پارلیمنٹ جو پہلا حکم دیا وہ ججوں کی رہائی کا تھا‘۔

بی بی سی کے نامہ نگار عبادالحق کے مطابق سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی وزارت عظمی سے علیحدگی کے بعد انہوں نے اپنے آبائی شہر جانے کے لیے ریل گاڑی کا استعمال کیا اور یوسف رضاگیلانی خود کار چلاتے ہوئے لاہور کے کینٹ اسٹیشن پہنچے۔

سید یوسف رضا گیلانی نے پیشنگوئی کی کہ آئندہ انتخابات کے نتائج مختلف نہیں ہوں گے اور مخلوط حکومت ہی وجود میں آئے گی اس لیے انتخابات کی خواہش رکھنے والے اس کی تیاری کر لیں۔

سابق وزیراعظم کے بقول عام انتخابات میں بھی پیپلز پارٹی کا اہم کردار ہوگا کیونکہ سینیٹ میں پیپلز پارٹی کو اکثریت حاصل ہے۔

سرائیکی صوبے کے بارے میں سوال پر سید یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ سرائیکی صوبہ بنانے کی پاداش میں انہیں سزا ملی ہے کیونکہ انہوں نے سرائیکی صوبے کی بات کی تھی۔

دفاع پاکستان کونسل کے لانگ مارچ کے سوال پر یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ لانگ مارچ کرنے والے پہلے جہادی تھے اور ان لوگوں کے کہنے پر نہ نیٹو سپلائی بند کی گئی تھی اور نہ اب کھولی گئی ہے۔ان کے بقول یہ فیصلہ ملک اور قوم کے مفاد میں کیا گیا ہے۔

سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی کا ان کے آبائی شہر ملتان پہنچنے پر زبردست استقبال کیا گیا۔وہ خانیوال سے گاڑیوں کے قافلے میں ملتان پہنچے۔

یوسف رضا گیلانی کا وزرات عظمیٰ سے نااہلی کے بعد اپنے آبائی شہر ملتان کا یہ پہلا دورہ ہے اور وہ ایک ایسے موقع پر اپنے آبائی شہر آئے ہیں جب ان کے بڑے بیٹے عبدالقادر گیلانی اپنے والد کی خالی ہونے والی نشست پر امیدوار ہیں۔

ادھر سابق وزیر خارجہ اور تحریک انصاف کے مرکزی رہنما شاہ محمود قریشی کے بھائی مرید حسین قریشی پیپلز پارٹی میں دوبارہ شامل ہوگئے ہیں۔

اسی بارے میں