لاہور میں دو مبینہ دہشت گرد گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption لاہور میں شدت پسندی کے متعدد واقعات پیش آ چکے ہیں

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں پولیس نے دو مبینہ شدت پسندوں کو گرفتار کر کے ان کے قبضے سے بھاری مقدار میں دھماکہ خیز مواد اور اسحلہ برآمد کیا ہے۔

پولیس کے مطابق حراست میں لیے گئے مبینہ شدت پسند لاہور میں دہشت گردی کی کارروائی کی تیاری کر رہے تھے۔

لاہور پولیس کا کہنا ہے کہ اطلاع ملنے پر ریلوے سٹیشن کے قریب کے علاقے میں چھاپہ مارا گیا اور دونوں شدت پسندوں کو اسلحے سمیت گرفتار کر لیا گیا۔

پولیس کے بقول گرفتار کیے گئے شدت پسندوں کے نام ضیاء الرحمان اور طارق ہیں اور ان شدت پسندوں نے افغانستان اور پاکستان کے قبائلی علاقے وزیرستان میں تربیت حاصل کی۔

زیر حراست ضیاءالرحمان نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ انہوں افغانستان میں تربیت حاصل کی اور وزیر ستان میں امریکی طیاروں کی بمباری میں اپنی ساتھیوں کی ہلاکت کے بعد پنجاب میں آگئے۔

برآمد ہونے والے دھماکہ خیز کے بارے میں شدت پسند کا کہنا ہے کہ ابھی انہوں نے اس کا تجربہ کرنا تھا۔

پولیس نے دونوں شدت پسندوں کے خلاف مقدمہ درج کر کے ان کے خلاف چھان بین شروع کر دی ہے۔

اسی بارے میں