پاکستان: سوشل میڈیا کے رجحانات

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 27 ستمبر 2012 ,‭ 17:49 GMT 22:49 PST

مارک زکربرگ کی فیس بک پاکستان کے چار فیصد شہریوں کی زندگیوں کا حصہ ہے

پاکستان میں سوشل میڈیا بہت تیزی سے ترقی کر رہا ہے اور اس کی تمام ویب سائٹس پر تیزی سے صارفین کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔

کیا یہ سماجی رابطے کا میڈیا پاکستان میں سماجی تبدیلی لانے کی اہلیت رکھتا ہے؟ اس پر حال ہی میں جاری ہونے والی ایک نئی رپورٹ میں اس بارے میں خدشات کا اظہار کیا گیا ہے۔

اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اگرچہ سوشل میڈیا رابطے کے اہم ذرائع کے طور پر تیزی سے ابھر کر سامنے آیا ہے لیکن ابھی اسے شمالی افریقہ اور مشرق وسطیٰ کی طرح تبدیلی کی ایک اہم وجہ بننے کے لیے بہت وقت درکار ہے۔

ناروے کے ایک تھنک ٹینک کی تیار کردہ اس رپورٹ کے مطابق پاکستان میں سوشل میڈیا کی مختلف ویب سائٹوں کے موثر بننے میں بڑی رکاوٹیں انٹرنیٹ تک کم افراد کی رسائی اور روایتی میڈیا کی آزادی ہیں۔

سوشل میڈیا کے معیار کو جانچنے والی ایک عالمی کمپنی سوشل بریکرز کے جائزے کے مطابق فیس بک کے پاکستان میں اٹھارہ ستمبر دو ہزار بارہ کو صارفین کی تعداد ستر لاکھ اکیانوے ہزار تین سو چالیس کے قریب تھی۔

اس حساب سے مارک زکربرگ کی فیس بک پاکستان کے چار فیصد شہریوں کی زندگیوں کا حصہ ہے۔

پاکستانی فیس بک صارفین کی بڑی اکثریت یعنی انہتر فیصد مرد ہیں۔

پاکستان میں ’کوک سٹوڈیو‘ کے فیس بک پر سب سے زیادہ یعنی تیرہ لاکھ ننانوے ہزار دو سو ستاون مداح ہیں، دوسرے نمبر پر گلوکار علی ظفر ہیں جن کے گیارہ لاکھ ستاون ہزار چھ سو چونتیس مداح ہیں۔

شخصیات میں پاکستان کے بانی محمد علی جناح کا صفحہ ہے جس کے آٹھ لاکھ تریالیس ہزار چار سو چونتیس مداح ہیں جس کے بعد عبدالقدیر خان کا صفحہ ہے جس کے سات لاکھ اٹھاون ہزار تین سو ستانوے فین ہیں۔

فیس بک کو عمران خان کی جماعت تحریک انصاف نے کامیابی کے ساتھ بڑے پیمانے پر استعمال کیا ہے خاص طور پر اپنے لاہور کے جلسے کے موقع پر جس میں نوجوانوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

یو ٹیوب پاکستانیوں کی ایک اور پسندیدہ ویب سائٹ ہے جس پر صارفین بہت سا وقت گانے سننے اور ویڈیوز دیکھنے میں صرف کرتے ہیں۔

یہ گوگل، یاہو اور بلاگ سپاٹ سے بھی زیادہ مقبولیت رکھتی ہے۔

پاکستانی حکام نے سترہ ستمبر دو ہزار بارہ کو اسلام مخالف فلم نہ ہٹانے پر ملک میں یو ٹیوب تک رسائی بند کر دی تھی۔

پاکستان میں ٹوئٹر کی مقبولیت کا ایک اہم عنصر اس پر اہم سیاستدانوں اور صحافیوں کی موجودگی ہے جو کہ ٹی وی اور اخبارات کے متبادل کے طور پر اسے استعمال کرتے ہیں۔

پاکستان میں ٹوئٹر پر نمایاں اور فعال لوگوں میں وزیر داخلہ رحمان ملک، مسلم لیگ نون کی رہنما ماروی میمن، پنجاب کے وزیر اعلیٰ شہباز شریف، پاکستان پیپلز پارٹی کے چئرمین بلاول بھٹو زرداری اور ایک رہنما شرمیلا فاروقی ہیں۔

پاکستان کے ایک آئی ٹی کنسلٹنٹ شعیب اطہر نے ایبٹ آباد سے ٹوئٹر پر امریکی فوجیوں کی مئی دو ہزار گیارہ میں اسامہ بن لادن کو ہلاک کرنے کی کارروائی پوری دنیا کو ٹویٹ کی۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔