’فورسز واپس بلانے کو تیار، ذمہ داری نواز پر ہوگی‘

آخری وقت اشاعت:  منگل 2 اکتوبر 2012 ,‭ 12:01 GMT 17:01 PST

’صوبہ کا پانچ فیصد حصے میں پولیس تعینات ہے جبکہ پچانوے فیصد حصہ ایف سی کے کنٹرول میں ہے‘

پاکستان کے وفاقی وزیر برائے اطلاعات قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ حکومت صوبہ بلوچستان سے فورسز واپس بلانے کو تیار ہیں لیکن اس کے بعد کے حالات کے ذمہ دار میاں نواز شریف ہوں گے۔

یہ بات انہوں نے منگل کو لاہور ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہی۔

واضح رہے کہ منگل ہی کو مسلم لیگ نواز کے سربراہ میاں نواز شریف نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ آزاد اور شفاف انتخابات کے لیے بلوچستان میں فرنٹیئر کور کی موجودگی ایک بڑی رکاوٹ ہے اور اس فورس کو صوبہ سے واپس بلا لینا چاہیے۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میاں نواز شریف کو یہ معلوم ہونا چاہیے کے صوبہ کے پانچ فیصد حصے میں پولیس تعینات ہے جبکہ پچانوے فیصد حصہ ایف سی کے کنٹرول میں ہے۔

’حکومت ایف سی واپس طلب کرنے کے لیے تیار ہے اور آپ ایک قومی لیڈر ہونے کے ناطہ ذمہ داری لیں کہ اس کے بعد کے حالات کے ذمہ دار آپ ہوں گے۔‘

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ میاں نواز شریف ایک قومی لیڈر ہیں اور ان کو اس طرح کی نعرے بازی نہیں کرنی چاہیے جو قابلِ عمل نہ ہوں۔

اس سے قبل میاں نواز شریف سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کی سابق صدر عاصمہ جہانگیر کے گھر ان کی والدہ کے انتقال پر تعزیت کے لیے گئے۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ لاپتہ افراد کی بازیابی کی ذمہ داری حکومت پر ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بلوچ قیادت کا یہ مطالبہ ہے کہ صوبے سے فوج اور ایف سی واپس طلب کی جائے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔