اورکزئی میں دھماکہ، کم از کم چار ہلاک

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 11 اکتوبر 2012 ,‭ 07:39 GMT 12:39 PST
فائل فوٹو

اورکزئی ایجنسی میں مسافر گاڑیوں کو نشانہ بنانے کے واقعات ماضی میں بھی پیش آ چکے ہیں

پاکستان کے قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی میں ہونے والے دھماکے میں کم از کم چار افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

مقامی حکام کے مطابق یہ واقعہ لوئر اورکزئی کے علاقے حسن زئی میں جمعرات کی صبح پیش آیا ہے۔

حسن زئی کا علاقہ پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع کوہاٹ کے قریب واقع ہے۔

دھماکے کا نشانہ ایک گاڑی بنی جس میں سوار چار افراد موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔

اس دھماکے میں بارہ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جنہیں علاج کے لیے کوہاٹ منتقل کر دیا گیا ہے۔

ہمارے نامہ نگار کے مطابق مقامی آبادی نے ہلاک ہونے والوں کی تعداد آٹھ بتائی ہے تاہم سرکاری ذرائع سے اس کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

دھماکے کی نوعیت کے بارے میں صوتحال واضح نہیں ہے۔ابتدائی طور پر کہا گیا تھا کہ یہ بارودی سرنگ کا دھماکہ تھا تاہم بعد ازاں حکام نے خیال ظاہر کی ہے بارودی مواد ایک گدھا گاڑی پر نصب تھا۔

اورکزئی ایجنسی میں مسافر گاڑیوں کو نشانہ بنانے کے واقعات ماضی میں بھی پیش آ چکے ہیں۔

رواں برس جولائی میں اورکزئی ایجنسی اور کوہاٹ کے سرحدی علاقے سپا میں ایک ویگن کو بارودی سرنگ سے نشانہ بنایا گیا تھا اور اس حملے میں سات افراد مارے گئے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔