کوئٹہ: نجی کلینک بند کرنے کا اعلان

آخری وقت اشاعت:  پير 19 نومبر 2012 ,‭ 14:23 GMT 19:23 PST
فائل فوٹو

ڈاکٹرز عاشورے پر بھی نجی کلینک بند رکھیں گے

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت میں ڈاکٹروں نے اعلان کیا ہے کہ وہ احتجاج کے دائرے کو وسیع کرتے ہوئے تمام نجی کلینک بند کر رہے ہیں۔

یہ اعلان بلوچستان کی پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے ایک پریس کانفرنس میں کیا۔

یاد رہے کہ بلوچستان میں ڈاکٹر ایک ماہ قبل کوئٹہ سے لاپتہ ہونے والے مشہور ماہر چشم ڈاکٹر سعید احمد خان کی بازیابی کے لیے احتجاج کر رہے ہیں۔

ڈاکٹر سعید احمد خان کو سولہ اکتوبر کو کوئٹہ کی سریاب روڈ سے سے اغوا کیا گیا تھا۔

پی ایم اے نے پیر کو پریس کانفرنس میں اعلان کیا کہ انہوں نے احتجاج کے دائرے کو نجی کلینک تک وسیع کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عاشورے پر بھی نجی کلینک بند رکھیں گے۔

اس سے قبل ڈاکٹروں نے احتجاجی مارچ کیا اور زرغون روڈ پر دھرنا دیا۔ تاہم پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کا استعمال کیا اور دو سو ڈاکٹروں کو حراست میں لے لیا۔

چالیس مزید ڈاکٹروں نے سول لائنز تھانے میں جا کر گرفتاری دی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔